News Search
Home News Dictionary TV Channels Names Weather Live Cricket Videos Photos Results Naats
Home Taza Tareen
ماہر چوروں نے جیولری شاپ سے سونے کے 60 کلو زیورات چوری کر لئے     موصل پر امریکی اتحاد کی بمباری، 230 شہری جاں بحق     خیبرپختونخوا کے وزیراعلیٰ پرویز خٹک کی احسن اقبال سے ملاقات     خیبرپختونخوا کے وزیراعلیٰ پرویز خٹک کی وفاقی منصوبہ بندی وترقی احسن اقبال سے ملاقات     لندن، دہشت گردی سے خوف زدہ خاتون دریا میں کود پڑی     ” عمر انکی 28 سال کیوں نہ ہو جائے ، دماغ ا ن کا 16 سال سے بڑا ہی نہیں ہوتا“     تیس کمپنیوں اور افراد پر امریکی پابندیاں لگ گئیں     کراچی: بچوں کو صحت کی مفت معیاری سہولیات کی فراہمی     عالیہ بھٹ نے انوشکا شرما سے متاثر ہو کر انہیں آئیڈیل مان لیا     2018 میں عمران خان سے خیبر پختونخوا بھی چھین لیں گے: آصف کرمان     
Urdu News
Maulana Tariq Jamil
a
Naat Khawan
Amjad Sabri Farhan Ali Qadri
Fasih Uddin Soharwardi Ghulam Mustafa Qadri
Imran sheikh Attari Junaid Jamshed
Owais Raza Qadri Shahbaz Qamar Faridi
Syed Mohammad Furqan Qadri Ummeh Habiba
Waheed Zafar Qasmi Zulfiqar Ali
UrduWire Names Directory
Muslim Names Arabic Names
Muslim Boy Names Muslim Girl Names
Pictures Gallery
Cleaning The Kaaba Area - One Of The Best Jobs In The World Cleaning The Kaaba Area - One Of The Best Jobs In The World
Dream World Water Park Resort Hotel Ticket & Membership Price 2017 Karachi Dream World Water Park Resort Hotel Ticket & Membership Price 2017 Karachi
Hawksbay Beach Huts Picture & Contact Numbers For Booking Huts Hawksbay Beach Huts Picture & Contact Numbers For Booking Huts
View all Pictures

 

Home >> Urdu News >> BBC Urdu
سائنس اور ٹیکنالوجی Share your views
فلم بینی ’قدرتی درد کش‘ کا کام کرتی ہے  [بی بی سی اردو] 21 Sep, 2016
DIEGO CERVOTHINKSTOCK المیہ دیکھنے سے انسانوں میں قدرتی طور پر درد کو کم کرنے والا کیمیائی مادہ پیدا ہوتا ہے سائنسدانوں کا کہنا ہے رلانے والی فلم دیکھنے سے سماجی ہم آہنگی اور آپس میں لگاؤ پیدا ہونے میں مدد ملتی ہے۔ اس دریافت سے ڈرامائی فکشن میں ہماری دلچسپی کی وضاحت ہو سکتی ہے خواہ وہ فن پارہ ہمیں رلانے والا ہی کیوں نہ ہو۔٭ سرجری کے دوران موسیقی سے درد میں کمی آکسفرڈ یونیورسٹی کی ایک ٹیم کے تجربے میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ المیہ فلمیں یا دوسرے ڈرامائي فن پارے ہمارے اندر انڈورفنز نامی کیمیائی مادے کی گردش بڑھا دیتے ہیں اور یہ مادہ بہتر محسوس کرنے میں معاون ثابت ہوتا ہے۔تحقیق کے مطابق یہ عمل قدرتی درد کش کے طور پر کام کرتا ہے اور اپنے آس پاس کے لوگوں کے درمیان قربت پیدا کرتا ہے۔یہ تحقیق رائل سوسائٹی کے جرنل اوپن سائنس میں شائع ہوئي ہے۔اس تحقیق کے سربراہ محقق پروفیسر روبن ڈنبر کا کہنا ہے کہ ’جب ہم شکاری برادریوں کی طرح ایک ساتھ رہنے لگے اس وقت سے قصہ گوئی انسانی دلچسپی کا باعث رہی ہے۔‘فکشن سے لطف حاصل کرنا انسانی سماج کا خاصہ رہا ہے لیکن اب تک سائنسدانوں نے اس کے ارتقائی عمل پر بہت زیادہ تحقیق نہیں کی ہے۔ SCIENCE PHOTO LIBRARY انڈورفنز کو بعض اوقات قدرتی درکش مادہ کہتے ہیں پروفیسر ڈنبر نے کہا: ’فکشن کی عمرانیات کے تحت تعلیم اداروں میں وسیع پیمانے پر تعلیم دی جاتی ہے اور اسے انسانی سماج کا خاصا کہا جاتا ہے اور یہ تمام تہذیب میں یکساں ہے۔ تاہم ابھی تک فکشن سے اس وابستگي اور اس کے اثرات کی وسیع پیمانے پر ماہر نفسیات یا ماہر حیاتیات نے وجوہات جاننے کی کوشش نہیں کی۔’اس کی سماجی وجوہات تو ہیں، جیسے اس سے ہم اپنی معلومات اور اقدار کو دوسری نسل تک پہنچاتے ہیں اور یہ ہمیں ایک دوسرے کے قریب لاتے ہیں۔ لیکن یہ پوری طرح اس بات کی وضاحت نہیں کرتا کہ ہم بار بار اس کی جانب کیوں رجوع کرتے ہیں اور محظوظ ہوتے ہیں۔‘آکسفرڈ کی ٹیم نے رضاکاروں کو ایک بے گھر شخص اور اس کے پریشان کن بچپن پر مبنی فلم ’سٹوارٹ: اے لائف بیک ورڈ‘ دکھائی جبکہ دوسرے گروپ کو عام موضوعات پر دستاویزی دکھائي گئي پھر جانچ کرنے والی ٹیم نے فلم دیکھنے سے قبل اور بعد میں درد کی سطح کی جانچ کی جو کہ وہ انڈورفن کی جانچ کے لیے کرتے ہیں۔پروفیسر ڈنبر نے کہا جن میں سب سے زیادہ جذباتی اثرات نظر آئے ان میں درد میں کمی کی سطح بھی زیادہ دیکھی گئی اور اپنے گروپ سے لگاؤ کا احساس بھی زیاد تھا۔
View News As Image
Post Your Comments
Select Language:    
Type your Comments / Review in the space below.

Name: Email:(Will not be shown) City:
Enter The Code:

 
Home | About Us | Contact Us |  Profiles |  Privacy Policy & Disclaimer | What is Meta News?
Top Searches: Jang News Cricinfo Express Tribune,  , SSC Part 1 Results 2016   Dunya News Bol News Live Samaa News Live Metro 1 News Waqt News Hum TV PTV Sports Live KTN News
Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on "as it is" based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Please read more!

UrduWire.com - First ever Urdu Meta News portal