News Search
Home News Dictionary TV Channels Names Weather Live Cricket Videos Photos Results Naats
Home Taza Tareen
رونالڈو نے آمدنی میں میسی کوپیچھے چھوڑ دیا     جوہری ہتھیاروں پر عالمی پابندی، امریکہ سمیت کئی ممالک کی مخالفت     اسلام آباد: ڈپٹی چیئرمن نیب کی عبوری ضمانت میں چھ اپریل تک توسیع     نقل مافیا نے وزیراعلیٰ سندھ کے احکامات ہوا میں اڑا دئیے     نور کی شادی ناکام ہونے کی وجہ سامنے آگئی     وزیر ریلوے کو اپنی وزارت کے معاملات میں کوئی دلچسپی نہیں: عمران خان     پے درپے ٹرین حادثات اور حکومت کا رویہ انتہائی شرمناک ہے:عمران خان     حقانی نیٹ ورک دوست ہیں اور نہ ہی پراکسی :پاکستان     لودھراں میں سرچ آپریشن،35 مشتبہ افراد گرفتار     واشنگٹن میں چیری کے دلکش پھول     
Urdu News
Maulana Tariq Jamil
a
Naat Khawan
Amjad Sabri Farhan Ali Qadri
Fasih Uddin Soharwardi Ghulam Mustafa Qadri
Imran sheikh Attari Junaid Jamshed
Owais Raza Qadri Shahbaz Qamar Faridi
Syed Mohammad Furqan Qadri Ummeh Habiba
Waheed Zafar Qasmi Zulfiqar Ali
UrduWire Names Directory
Muslim Names Arabic Names
Muslim Boy Names Muslim Girl Names
Pictures Gallery
Dream World Water Park Resort Hotel Ticket & Membership Price 2017 Karachi Dream World Water Park Resort Hotel Ticket & Membership Price 2017 Karachi
Cleaning The Kaaba Area - One Of The Best Jobs In The World Cleaning The Kaaba Area - One Of The Best Jobs In The World
Hawksbay Beach Huts Picture & Contact Numbers For Booking Huts Hawksbay Beach Huts Picture & Contact Numbers For Booking Huts
View all Pictures

 

Home >> Urdu News >> Voice Of America Urdu
سائنس اور ٹیکنالوجی Share your views
شمالی قطب کی برف پگھلنے کا ذمہ دار کون، انسان یا فطرت [وائس آف امریکہ اردو] 14 Mar, 2017

سائنسی جریدے نیچر کلائمیٹ چینج میں امریکی سائنس دانوں کے ایک گروپ کی شائع ہونے والی تحقیق میں کہا گیا ہے کہ آرکٹک کا برفانی سمندر کئی عشروں سے یکساں انداز میں سکڑتا رہا ہے اور ستمبر 2012 میں وہ اپنی کمترین سطح پر پہنچ گیاتھا۔

حالیہ عشروں کے دوران قطب شمالی کے وسیع برفانی سمندر آرکٹک میں صدیوں سے موجود برف کی تہیں پگھلنے کی ذمہ داری صرف انسانی سرگرمیوں پر ہی عائد نہیں ہوتی بلکہ کرہ ارض پر رونما ہونے والے قدرتی چکر بھی اس میں حصے دار ہیں۔

سائنس دانوں کے ایک گروپ کی جانب سے پیر کے روز جاری ہونے والے ایک مطالعاتی جائزے میں کہا گیا ہے کہ انسان اس چیز سے خوف زدہ ہے کہ اگلے چند برسوں میں آرکٹک اپنے برفانی لبادے سے یکسر محروم ہوجائے گا اور اس کی وجہ اس کی پیدا کردہ گلوبل وارمنگ ہوگی، لیکن اگر کرہ ارض کا فطری چکر پلٹ کر سرمائی سمت منتقل ہوجائے تو آرکٹک کے گلیشیئر پگھلنے کا عمل سست پڑ سکتا ہے۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہےکہ ممکنہ طور پر آرکٹک کے علاقے میں سن 1979 کے بعد سے موسمیاتی تبدیلیوں کی 30 سے 50 فی صدتک کی ذمہ داری قدرتی اتار چڑھاؤ اور تبدیلیوں پر ہے۔

سائنسی جریدے نیچر کلائمیٹ چینج میں امریکی سائنس دانوں کے ایک گروپ کی شائع ہونے والی تحقیق میں کہا گیا ہے کہ آرکٹک کا برفانی سمندر کئی عشروں سے یکساں انداز میں سکڑتا رہا ہے اور ستمبر 2012 میں وہ اپنی کمترین سطح پر پہنچ گیاتھا۔

سائنس دانوں نے یہ نتیجہ 1979 سے سیٹلایٹ سے حاصل ہونے والے اعدادوشمار کے مطالعے سے کیا۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ مارچ کے وسط میں سن 2015 اور2016 کے موسم سرما کے مقابلے میں آرکٹک میں برف کی مقدار اپنی کمترین سطح پر دیکھی گئی۔

رپورٹ کے مصنف ژینگ ہوا ڈنگ نے، جن کا تعلق یوینورسٹی آف کیلی فورنیا سے ہے، کہا ہے کہ یہ قدرتی عمل رک سکتا ہے یا پلٹ بھی سکتا ہے جس کے بعد ہم آرکٹک میں برف پگھلنے کی رفتار سست پڑتے ہوئے دیکھ سکتے ہیں اور یہ بھی ہوسکتا ہے کہ وہاں برف کی سطح میں اضافہ ہوناشروع ہوجائے۔

لیکن یونیورسٹی آف ریڈنگ کے اسکالر ایڈ ہوکنگز کا کہنا ہے کہ اس کے باوجود انسان کی جانب سے طویل عرصے تک گرین ہاؤس گیسیں پیدا کرنے کا عمل قطبی علاقوں میں برف کے پگھلاؤ ایک اہم عنصر کی حیثیت رکھتا ہے۔

ہوکنگز، جو اس مطالعاتی جائزے میں شامل نہیں تھے، کہتے ہیں کہ گرین ہاؤس گیسوں کی موجودگی میں، اگر ہم مستقل کی جانب دیکھیں تو پھر سوال یہ نہیں ہے کہ کیا ایسا ہوگا بلکہ یہ ہے کہ کس سال موسم گرما میں ہمیں آرکٹک میں برف کا ایک بھی ٹکڑا نظر نہیں آئے گا۔

آرکٹک کے علاقے میں برف کا پگھلاؤ وہاں کے آبائی باشندوں کی زندگیوں کو درہم برہم کر رہا ہے اور جنگلی حیات کو نقصان پہنچا رہا ہے، جس کی نمایاں مثالیں برفانی ریچھ اور سیل ہے۔

سن 2013 میں آب و ہوا کی تبدیلی سے متعلق سائنس دانوں کے ایک پینل نے کہا تھا کہ آرکٹک میں برف کے بڑے پیمانے پر پگھلاؤ میں امکانی طور پر انسانی ہاتھ ہے ۔ رپورٹ میں کہا گیا تھاکہ اگر گرین ہاؤس گیسوں کا اخراج نہ روکا گیا تو اس صدی کے نصف تک آرکٹک برف سے بالکل خالی ہوجائے گا۔

فیس بک فورم


View News As Image
Post Your Comments
Select Language:    
Type your Comments / Review in the space below.

Name: Email:(Will not be shown) City:
Enter The Code:

 
Home | About Us | Contact Us |  Profiles |  Privacy Policy & Disclaimer | What is Meta News?
Top Searches: Jang News Cricinfo Express Tribune,  , SSC Part 1 Results 2016   Dunya News Bol News Live Samaa News Live Metro 1 News Waqt News Hum TV PTV Sports Live KTN News
Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on "as it is" based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Please read more!

UrduWire.com - First ever Urdu Meta News portal