نیشنل ٹرائنگولر ٹی ٹوئنٹی ویمنز کرکٹ چیمپئن شپ پی سی بی چیلنجرز نے جیت لی

بول نیوز  |  Dec 01, 2020

پی سی بی چیلنجرزنے نیشنل ٹرائنگولر ٹی ٹوئنٹی ویمنز کرکٹ چیمپئن شپ کا فائنل جیت لیا۔

تفصیلات کے مطابق  ‏ پنڈی کرکٹ اسٹیڈیم راولپنڈی میں کھیلی جانے والی نیشنل  ٹرائنگولر ویمنز کرکٹ  چیمپئن شپ پی سی بی چیلنجرز نے جیت لی ۔

پی سی بی چیلنجرز نے فائنل میں پی سی بی ڈائنا مائٹس کو 7 رنز سے شکست دی ۔

پی سی بی ڈائنا مائٹس نے   ٹاس  جیت کر  پی سی بی چیلنجرز  کو  پہلے کھیلنے کی دعوت دی ۔

پی سی بی چیلنجرز نے مقررہ 20 اوورز میں 7 وکٹوں کے نقصان پر 133 رنز بنائے ۔ صدف شمس  اور منیبہ علی نے پہلی وکٹ کی شراکت میں 15 رنز جوڑے ۔ کپتان منیبہ علی 9 رنز بنا کر  آؤٹ ہوئیں ۔ صدف شمس نے 18 رنز بنائے ۔

PCB Challengers win National Triangular T20 Women's Cricket Championship

More: https://t.co/MlMP4uom6n#BackOurGirls | #HarHaalMainCricket pic.twitter.com/0Na58JQTet

— PCB Media (@TheRealPCBMedia) December 1, 2020

کائنات حفیظ نے 27 گیندوں پر 31 رنز تین چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے بنائے ۔ بسمہ معروف 12 گیندوں پر 18 رنز بنا کر آؤٹ ہوئیں ۔ وحیدہ  اختر 11 اور فاطمہ ثناء 24 رنز بنا کر  ناٹ آؤٹ رہیں ۔

‏ پی سی بی ڈائنا مائٹس  کی جانب سے سبحا نہ طارق نے چار اوورز  میں 37 رنز دے کر تین کھلاڑیوں کو پویلین بھیجا ۔ نشرہ سندھو اور رامین شمیم نے ایک  ایک وکٹ حاصل کی ۔

‏ہدف کے تعاقب میں پی سی بی ڈائنا مائٹس مقرر 20 اوورز میں 6 وکٹوں کے نقصان پر 126 رنز بنا سکی ۔

ناہیدہ خان  نے 39، عائشہ ظفر نے  ایک ، حفصہ خالد نے 20 ، عمیمہ سہیل نے 12 اور ارم جاوید نے 15 رنز بنائے ۔ کائنات امتیاز 29 گیندوں پر دو چوکوں کی مدد سے 32 رنز بنا کر ناٹ آؤٹ رہیں ۔

پی سی بی چیلنجرز کی جانب سے سیدہ عروب شاہ نے دو جبکہ ایمن انور ، فاطمہ ثناء ، اور ندا ڈارنے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔

کائنات حفیظ پلیئر آف دی میچ قرار پائیں۔

Player-of-the-match: Kainat HafeezPlayer-of-the-tournament: Kainat Imtiaz#DYNAMITESvCHALLENGERSScorecard: https://t.co/a11pjUqVvw#BackOurGirls | #HarHaalMainCricket pic.twitter.com/SvCFaVuMtr

— Pakistan Cricket (@TheRealPCB) December 1, 2020

کائنات امتیاز کو آل راونڈ پرفارمنس پر پلئیر آف دی ٹورنامنٹ قرار دیا گیا ۔انہوں نےٹورنامنٹ میں 111 رنز بنائے اور تین وکٹیں حاصل کیں۔

-->
مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More