ملائیشیا کے بادشاہ اور ملکہ بھی قرنطینہ میں‌ چلے گئے

نوائے وقت  |  Mar 26, 2020

برطانوی اخبار نے دعویٰ کیا ہے کہ ملائیشیا میں شاہی کے سات ملازمین میں مہلک ترین کرونا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔برطانوی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق دنیا کے 197 ممالک کو اپنی لپیٹ میں لینے والے ہلاکت خیز کرونا وائرس کی وبا نے ملائیشیا کے شاہی محل کے ملازمین کو بھی متاثر کردیا۔برطانوی میڈیا کا کہنا ہے کہ ملائیشیا کے بادشاہ اور ان کی اہلیہ ملازمین میں وائرس کی تشخیص کے بعد قرنطینہ میں چکے گئے ہیں۔رپورٹ کے مطابق ملائیشیا کے بادشاہ سلطان اور ان کی اہلیہ نے ملازمین میں وائرس کی تشخیص کے بعد اپنا بھی کرونا ٹیسٹ کروایا تھا جو منفی آیا۔برطانوی میڈیا کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ملائیشیا کے بادشاہ اور ان کی اہلیہ احتیاطی تدابیر پر 14 دن قرنطینہ میں گزاریں گے۔کرونا وائرس کے باعث ملائیشیا میں اب تک 23 افراد ہلاک جبکہ 235 نئے کیسز رپورٹ ہونے کے بعد متاثرین کی تعداد 2 ہزار 31 ہوگئی ہے۔خیال رہے کہ کرونا وائرس کی وبا نے دنیا بھر میں پھیل چکی ہے جس میں مبتلا افراد کی ہلاکتیں 21 ہزار سے تجاوز کرچکی ہیں جبکہ مریضوں کی تعداد پونے 5 لاکھ تک پہنچ چکی ہے۔حوصلہ افزا بات یہ ہے کہ وائرس میں مبتلا 1 لاکھ 14 افراد سے زائد افراد صحت یاب بھی ہوئے ہیں۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More