بس پتہ نہیں ایسا کیا کر بیٹھے کہ اللہ کو اتنے پیارے ہوگئے ۔۔ سہیل اصغر اپنی زندگی میں کیسے انسان تھے؟ جانیے ان کی فیملی کے بارے میں بھی چند باتیں

ہماری ویب  |  Nov 13, 2021

پاکستان کے جانے مانے اداکار سہیل اصغر آج جہاں فانی سے رخصت ہوئے۔ انہوں نے کئی مشہور ڈراموں میں اداکاری کے جوہر دکھائے جن میں چاند گرہن، خدا کی بستی، دکھ سکھ ، حویلی، کاجل گھر، ریزہ ریزہ، پیاس اور دیگر ڈرامے شامل ہیں۔

سینئر اداکار سہیل اصغر گذشتہ ڈیڑھ سال سے بیمار تھے۔ اور ان کے حوالے سے تازہ ترین اطلاعات یہ ہیں کہ وہ پچھلے ایک ہفتے سے اسپتال میں زیر علاج تھے۔

*سہیل اصغر کی زندگی کے بارے میں

ورسٹائل اداکار نے فلموں ، ڈراموں اور تھیٹر میں بھی کام کیا ہے۔ سہیل اصغر 15 جون 1954 کو لاہور میں پیدا ہوئے۔ انہوں نے اپنی تعلیم مکمل کرنے کے بعد باقاعدہ اپنے کیرئیر کا آغاز ریڈیو پاکستان سے کیا۔ لاجواب اداکاری سے سامعین کے دل جیتنے والے معروف اداکار سہیل اصغر کا شمار پاکستان کے نامور فنکاروں میں ہوتا تھا۔

*سہیل اصغر کی فیملی

مقبول اداکار سہیل اسغر کی اہلیہ کا نام تسنیم اصغر ہے اور ان کا ایک بیٹا ہے جس کا نام علی سہیل ہے۔

*سہیل اصغر کا اپنے دوست کو آخری پیغام

بی بی سی اردو کی جانب سے لیجنڈری اداکار سہیل اصغرکی اپنے دوست کو آخری پیغام پوسٹ کیا گیا جو لوگوں کے دل کو چھو گیا۔ انہوں نےاپنے دوست کو کہا کہ جیتے رہو، اللہ اپک تمھیں صحت کاملہ عطا کرے۔ انہوں نے کہا کہ بیمار کی دعا بیمار کو لگتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ بس بیٹھے بٹھائے رب آزمائشیں بھیج دیتا ہے۔اداکار کا کہنا تھا کہ اللہ کا شکر ہے کہ اس نے مجھے سرخرو رکھا اور آگے بھی رکھے گا۔ان کا کہنا تھا کہ اللہ پاک میرے ساتھ ہے،میری ایک ایک سانس کے ساتھ ہے۔

سہیل اصغر نے کا کہنا تھا کہ بس پتہ نہیں ایسا کیا کر بیٹھے کہا اللہ کو اتنے پیارے ہوگئے۔سہیل اصغر کا کہنا تھا کہ کہتے ہیں کہ اللہ جن سے پیار کرتا ہے انہیں آزماتا بھی خوب ہے۔

اداکار کا مزید اپنے دوست سے کہنا تھا کہ زندگی بھر کسی کا برا نہیں چاہا۔ہر ایک لیے اچھا سوچا ہے۔ آخر میں انہوں نے اپنے دوست کی صحت کے لیے دعا کی اللہ تمھیں صحت اور لمبی زندگی عطا فرمائے۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More