پنجاب میں دو، کشمیر میں تین ہفتوں کے لیے لاک ڈاؤن کا فیصلہ

اردو نیوز  |  Mar 23, 2020

کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے سندھ کے بعد اب پنجاب حکومت نے بھی صوبے کو دو ہفتوں کے لیے لاک ڈاؤن کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ یہ اہم فیصلہ پیر کو صوبائی کابینہ کی کمیٹی کے اجلاس میں کیا گیا ہے

دوسری طرف پاکستان کے زیر انتظام کشمیر کے وزیراعظم راجہ فاروق نے بھی ریاست کو تین ہفتوں کے لیے لاک ڈاؤن کرنے کا اعلان کیا ہے۔

لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے پنجاب کے وزیراعلی عثمان بزدار نے بتایا ہے کہ لاک ڈاؤن پر عمل درآمد منگل 24 مارچ صبح 9 بجے سے ہوگا اور 6 اپریل تک تمام شاپنگ مالز اور مارکیٹیں بند رہیں گی۔ سبزی منڈی اور کریانہ سٹورزکھلے رہیں گے اور فوڈ سپلائی چین برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

مزید پڑھیںسندھ میں لاک ڈاؤن ، کراچی اور سکھر ایئر پورٹ کل سے بندNode ID: 466401لاک ڈاؤن میں کیا نہیں کرنا؟Node ID: 466431سندھ میں لاک ڈاؤن، 'جنگ ڈنڈے سے نہیں جیتی جاسکتی'Node ID: 466601

انہوں نے یہ بھی بتایا ہے کہ صوبے میں کورونا وائرس کے کیسز کی تعداد 246 ہوگئی ہے۔

عثمان بزدار نے یہ بھی کہا ہے کہ پنجاب میں دو ہفتوں کے لیے تمام سیاحتی مقامات بھی بند رہیں گے۔ صوبے میں کرفیو جیسی صورت حال نہیں ہوگی، ایسا نہیں ہوگا کہ لوگ گھروں سے باہر نہیں نکل سکتے۔

ان کے مطابق لاک ڈاؤن کے دوران صوبے بھرمیں ڈبل سواری پر پابندی ہوگی۔

پاکستان کے زیرانتظام کشمیر میں لاک ڈاؤنپاکستان کے زیر انتظام کشمیر میں لاک ڈاؤن کا آغاز پیر کی رات 12 بجے سے ہوگا۔

کشمیر کے وزیراعظم راجہ فاروق کے مطابق ناگزیر حالات میں سفر کرنے کے لیے شہریوں کو خصوصی پاس جاری کیے جائیں گے۔ عوام کے غیر ضروری سفر اور باہر نکلنے پر پابندی ہوگی جبکہ ذرائع آمدورفت معطل رہیں گے۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More