کینیڈا:90 ہزارغیرملکی طلبہ کومستقل رہائش دینے کااعلان

سماء نیوز  |  Apr 15, 2021

فائل فوٹو

کینیڈا کے وزیر امیگریشن نے 90 ہزار غیر ملکی طلب علموں اور ہیلتھ کے شعبے سے وابستہ ورکرز کو مستقل رہائش دینے کا اعلان کیا ہے۔

مائیکرو بلاگنگ سائٹ پر امیگریشن وزیر مارکو مینڈی سینو کا کہنا تھا کہ کینیڈا نے 90 ہزار غیرملکی طلبہ اور ورکرز کو مستقل رہائش دینے کا فیصلہ کیا ہے، جس میں کینیڈا میں بعض پاکستانی طلبہ کو بھی سہولت ملنے کا امکان ہے۔

امیگریشن وزیر کا کہنا ہے کرونا وبا کے دوران خدمات انجام دینے والوں کو مستقل رہائش دی جائے گی۔ مستقل رہائش کا پروگرام 6 مئی سے نافذ العمل ہوگا۔

کینیڈا کے امیگریشن وزیر کے مطابق ہیلتھ کیئر سمیت مختلف شعبوں میں ایک سال کام کا تجربہ رکھنے والے افراد اہل ہوں گے۔ گزشتہ 4 سال کے دوران پوسٹ سیکنڈری ڈگری حاصل کرنے والے گریجویٹس بھی اس پروگرام کے اہل ہوں گے۔

یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ گزشتہ سال 2020 میں کینیڈین حکومت کی جانب سے اگلے 3 سالوں میں 12 لاکھ سے زائد نئے غیر ملکیوں کو ملک میں آباد کرنے کی منصوبہ بندی کا اعلان کیا گیا تھا۔

مارکو مینڈیسینو کا کہنا تھا کہ یہ فیصلہ ملک میں افرادی قوت کی کمی کو دور کرنے اور معیشت کو فروغ دینے کے لیے کیا گیا ہے۔ مارکو کا مزید کہنا تھا کہ حکومت 2021 میں نئی مستقل سکونت کیلئے 4 لاکھ ایک ہزار، 2022 میں 4 لاکھ 11 ہزار اور 2023 میں 4 لاکھ 21 ہزار درخواستیں منظور کرے گی۔

دوسری جانب امیگریشن پالیسی ریسرچر رابرٹ فیلکونر نے کہا تھا کہ حکومت اپنے اس ٹارگٹ کو پورا کرنے میں کامیاب ہوجاتی ہے تو غیرملکیوں کو کینیڈا میں آباد کرنے کا 1911 کے بعد یہ بلند ترین ریکارڈ ہوگا۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More