احتساب کے بیانیے کونیب کے باعث دھکچالگا ہے، علی نوازاعوان

سماء نیوز  |  Apr 17, 2021

وزیراعظم کے معاون خصوصی علی نواز اعوان کا کہنا ہے کہ حکومت کے احتساب کے بیانیے کو نیب کی وجہ سے دھچکا لگا ہے۔

سماء کے پروگرام پروگرام نیوز بیٹ میں گفتگو کرتے ہوئے علی نواز اعوان کا کہنا تھا کہ ہم نے اداروں کو آزاد کیا ہے، احتساب کرنا نیب کا جبکہ سزائیں دینا عدالتوں کا کام ہے۔

علی نواز اعوان کا کہنا تھا کہ پیپلزپارٹی اور ن لیگ نے ایک دوسرے کیخلاف کیسز بنائے ہیں، پیپلزپارٹی 13 سال میں کراچی ٹرانسپورٹ کا کوئی نظام نہیں دے سکی جبکہ سندھ میں کتے کاٹنے کی ویکسین نہیں ملتی، یہ ہے ان کی 13 سالہ کارکردگی۔

انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی کہتی ہے کہ ہم کراچی میں گرین لائن چلائیں گے لیکن ان سے کراچی کے نالے تک صاف نہیں ہورہے اور یہ کام بھی ہم کرکے دے رہے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ کراچی کے عوام کیلئے کے سی آر منصوبہ بھی ہم نے شروع کیا جبکہ احساس پروگرام  کا 33 فیصد بجٹ سندھ میں تقسیم کیا گیا۔

کابینہ میں ردوبدل سے متعلق علی نواز اعوان  کا کہنا تھا کہ یہ کپتان کی صوابدید ہے کہ کس کو کہاں کھلانا ہے ہمارا مقصد سسٹم میں بہتری لانا ہے۔

انہوں نے اپوزیشن اتحاد پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ پی ڈی ایم آج کل وینٹی لیٹر پر ہے چوں کہ یہ ایک غیر فطری اتحاد تھا اس لیے نہیں چل سکا۔

علی نواز کا کہنا تھا پیپلزپارٹی والوں نے الزام لگایا تھا کہ مولانافضل الرحمان نے پچھلے لانگ مارچ کے موقع پر نوازشریف سے پیکیج لیا تھا۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ اس ملک میں کنٹینر لگانا اور سوشل میڈیا بلاک کرنے کی بنیاد پیپلزپارٹی نے رکھی ہے۔

جے یو آئی کے رہنماء مولانا حمداللہ نے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ جب تک ڈرائیونگ سیٹ پر عمران خان بیھٹے ہیں سواریوں کو ایک سیٹ سے دوسرے سیٹ پر بٹھانے سے فائدہ نہیں ہوگا۔

مولانا حمد اللہ نے سوال کیا کہ اگر وزارتیں اس بنیاد پر تبدیل کی جارہی ہے کہ ان کی کارگردگی ٹھیک نہیں تو انہی لوگوں کو دوسری وزارتیں کیوں دی جارہی ہیں۔

رہنماء جے یو آئی کا کہنا تھا کہ اصل مسئلہ ڈرائیونگ سیٹ پر بیٹھا شخص ہے، عمران خان کہتے ہیں یوٹرن بڑے لیڈر کی نشانی ہوتی ہے لیکن یوٹرن کا مطلب وعدہ خلافی ہے۔

پی ڈی ایم سے متعلق ان کا کہنا تھا کہ جمہوریت کیلئے پیپلزپارٹی کی قربانیاں تسلیم کرتے ہیں لیکن اس نے پی ڈی ایم کے فیصلوں سے انخراف کیا۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ ہم نے انہیں کہا کہ اپنے فیصلوں پر نظرثانی کریں تاکہ ہم ایک ساتھ آگے بڑھیں۔

مولانا حمداللہ نے کہا کہ نوازشریف کو بیماری کا سرٹیفکیٹ وزیراعظم کے معاون خصوصی فیصل سلطان نے دیا تھا اگر ڈیل ہوئی ہے تو حکومت نے کی ہوگی اور اگر حکومت نے ڈیل نہیں کی تو پھر حکومت کون کررہا ہے۔

پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے پیپلزپارٹی کے رہنما فیصل کریم کنڈی کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف کے دوستوں کو مبارکباد پیش کرتا ہوں کہ جس شخص کے بارے میں یہ کہتے تھے کہ معیشت کا بیڑاغرق کیا آج اسی کو وزیرخزانہ بنادیا۔

فیصل کریم کنڈی کا کہنا تھا کہ فوادچوہدری کو پہلے ہٹایا گیا اور اب دوبارہ لگایا گیا، حکومت کا کاؤنٹ ڈاؤن شروع ہوچکا ہے لیکن ان سے ابھی تک ٹیم نہیں بن سکی۔

انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کے رہنماء سندھ حکومت پر تنقید کرتے ہیں مگر یہ نہیں دیکھتے کہ پنجاب کی کیا حالت ہے۔

فیصل کریم کنڈی نے سوال کیا کہ وزیراعظم نے جو پہلے سندھ کیلئے اعلانات کیے تھے اس کا کیا بنا۔ انہوں نے مزید کہا کہ وزیراعظم سال میں صرف ایک بار سندھ کا دورہ کرتے ہیں اور اس دوران بھی وہ شوکت خانم اسپتال کیلئے چندہ مانگتے ہیں۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More