بڑے پیمانے پردرآمدات اشیائے خورونوش کی قیمتوں میں اضافے کا باعث

سماء نیوز  |  Jun 11, 2021

فائل فوٹو

وزیر خزانہ شوکت ترین کا کہنا ہے کہ درآمد بڑھانے کی وجہ سے پاکستانی اشیائے خور و نوش کی قیمتوں میں بے پناہ اضافہ ہوا ہے۔ پاکستان نے ماضی کے مقابلے میں زیادہ برآمدگی کے بجائے درآمد کو بڑھایا۔

جمعرات 10 جون کو اسلام آباد میں اقتصادی سروے پیش کرتے ہوئے وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین کا کہنا تھا کہ پہلے ہم صرف برآمد کیا کرتے تھے، تاہم اب ہم چینی، گندم کھجور وغیرہ درآمد بھی کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ عالمی منڈی میں جب اشیائے خور و نوش کی قیمتوں میں اضافہ ہوتا ہے تو اس کا اثر مقامی سطح پر بھی ملک میں نظر آتا ہے۔ اور یہ اس لیے ہوتا ہے کہ ہم اچھی چیزیں بیرون ملک بیچتے ہیں۔ تاہم یہ بھی دیکھا گیا ہے کہ عالمی مارکیٹ کے مقابلے میں پاکستان میں ان چیزوں کی قیمتیں کم بڑھیں۔

چینی کی قیمتوں کی مثال دیتے ہوئے وزیر خزانہ نے کہا کہ عالمی مارکیٹ میں چینی کی قیمت میں 58 فیصد اضافہ ہوا، جب کہ اسی دوران پاکستان میں یہ ہی اضافہ صرف 19 فیصد ہوا۔ خام تیل کی قیمت کو دیکھا جائے تو عالمی مارکیٹ میں اس کی قیمت 119 فیصد بلند ہوئی، مگر ہمارے ملک میں اسے صرف 32 فیصد بڑھایا گیا۔

گندم کی قیمتوں سے متعلق شوکت ترین نے کہا کہ عالمی مارکیٹ اور پاکستان میں گندم کی قیمتوں میں 29 فیصد اضافہ ہوا۔ رآمدات میں اضافہ کے لیے دیگر شعبوں پر بھی توجہ دے رہے ہیں، فارماسیوٹیکل، پھلوں، سبزیوں اور گوشت کی برآمدات میں بھی اضافہ ہوا ہے۔

ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ چیزوں کی بڑھتی قیمتیں عوام پر اثر انداز ہو رہی ہیں، یہ ہی وجہ ہے کہ ہم نے قیمت کے بجائے ان کی پیداوار میں اضافہ کا سوچا ہے۔ پیداوار پر ہونے والی لاگت بھی کم ہو رہی ہے جس سے معیشت میں بہتری آئے گی۔

انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں پیداوار بڑھا کر اشیائے کو محفوظ بنانے کیلئے کولڈ اسٹوریج اور گوداموں کو زیادہ سے زیادہ ترجیحی بنیادوں پر بنانا ہوگا۔ تاکہ گندم اور چینی جیسی اشیا کو زیادہ وقتوں کیلئے محفوظ رکھا جا سکے اور مڈل مین کے کردار کو کم کیا جاسکے، جو مصنوعی طریقے سے اشیائے کی قیمتوں کا تعین یا اضافہ کرتے ہیں۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More