دنیا کو اعتدال کا وعظ کرنے سے پہلے بھارت کو اپنے گھر کو بہتر کرنا چاہیے، زاہد حفیظ چوہدری

بول نیوز  |  Aug 03, 2021

ترجمان دفترخارجہ زاہد حفیظ چوہدری نے کہا کہ دنیا کو اعتدال کا وعظ کرنے سے پہلے بھارت کو اپنے گھر کو بہتر کرنا چاہیے۔

تفصیلات کے مطابق ترجمان دفترخارجہ زاہد حفیظ چوہدری نے بھارت کی سلامتی کونسل میں ترجیحات کے بیان پر ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ بھارتی وزیر خارجہ کی جانب سے بھارت کے لیے اگست میں بطور صدر سلامتی کونسل تین ترجیحات کا اعلان کیا گیا اور ان ترجیحات میں اعتدال، مذاکرات اور عالمی قوانین پر عملدرآمد شامل ہیں۔

انہوں نے کہا کہ یہ ایک ملک کا دوہرا معیار ہے کہ وہ اعتدال، مذاکرات اور عالمی قوانین پر عملدرآمد کا علم بردار ہونے کے دعوے کے باوجود تینوں سے انکاری ہے، انتہا پسند ہند وتوا نظریات بھارت کے تمام ریاستی اداروں میں پنجے گاڑے ہوئے ہیں۔

زاہد حفیظ چوہدری نے کہا کہ بی جے بی آر ایس ایس حکومت کا ریکارڈ اقلیتوں بالخصوص مسلمانوں کے حقوق کے منظم استحصال و خلاف ورزیوں سے بھرا پڑا ہے، مذاکرات کے حوالے سے بھارت نے اپنے پڑوس میں تعمیری اور بامقصد مذاکرات کی تمام کوشیشوں کو ضائع کیا۔

انہوں نے کہا کہ اقتدار سنبھالنے کے بعد وزیراعظم عمران خان نے واضح اعلان کیا کہ اگر بھارت امن کے لیے ایک قدم اٹھائے گا تو پاکستان دو قدم لے گا، تاہم مذاکرات کے برعکس بھارت نے اپنے 5 اگست 2019 کے غیرقانونی و یکطرفہ اقدامات سے ماحول کو خراب کیا۔

ترجمان دفترخارجہ نے کہا کہ بھارت کو ہی خطے میں تنازعات کے خاتمے کے لیے بامعنی مذاکرات کے لیے سازگار ماحول تیار کرنا ہوگا، عالمی قوانین کے حوالے سے بھارت سات دہائیوں سے اقوام متحدہ سلامتی کونسل قراردادوں کی کھلی خلاف ورزی کر رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ 5 اگست 2019 سے بھارت کے غیرقانونی و یکطرفہ اقدامات کا سلسلہ عالمی قوانین، اقوام متحدہ چارٹر، سلامتی کونسل قراردادوں اور چوتھے جنیوا کنونشن کی کھلی خلاف ورزیاں ہیں۔

ترجمان دفترخارجہ زاہد حفیظ چوہدری نے مزید کہا کہ بھارت کو چاہیے کہ وہ اپنے آپ کو ان نکات پر چیمپئن ثابت کرنے کے بجائے پہلے ان پر عملدرآمد ثابت کرے۔

Adsense 300×250
مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More