زیادہ میٹھا انسان کی دماغی صحت پر اثر انداز ہوسکتا ہے، ماہرین

بول نیوز  |  Nov 27, 2021

میٹھا کھانا ہر ایک کو بہت پسند ہوتا ہے اور کچھ لوگوں کی تو زندگی کا محور بھی میٹھا ہی ہوتا ہے۔

ایسے لوگ کسی نا کسی بہانے میٹھے مل جانے کے حوالے سے ہی سوچتے ہیں لیکن کیا آپ جانتے ہیں کہ زیادہ میٹھا کھانے سے انسان کی دماغی صحت متاثر ہوسکتی ہے۔

اس حوالے سے کی جانے والی تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ وہ افراد جن کو میٹھا کھانا حد سے زیادہ پسند ہے وہ الزائمر، ڈمنیشیا کا شکار ہوسکتے ہیں۔

اس حوالے سے محققین نے بتایا ہے کہ انسانی دماغ چینی کو گلوکوز میں توڑنے کی صلاحیت رکھتا ہے تاکہ دماغ کودرکار توانائی فراہم کی جاسکے لیکن جب دماغ میں گلوکوز کی سطح بڑھ جاتی ہے تو دیگر دماغی مسائل کا سامنا درپیش ہونے لگتا ہے۔

محققین کا کہنا ہے کہ کسی بھی انسان کا زیادہ میٹھا کھانا انسان کی یادداشت سمیت توازن بھی بری طرح اثر انداز ہونے لگتا ہے۔

دوسری جانب کی جانے جانے والی ایک اور تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ ممیٹھا کھانے سے ذیابیطس کا تعلق نہیں ہے البتہ زیادہ مقدار میں میٹھا کھانا  کینسر زدہ خلیات کی تعداد کئی گنا بڑھا دیتا ہے۔

Square Adsence 300X250
مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More