میرا سافٹ ویئر اپ ڈیٹ تھا، ہارڈ وئیر اپ ڈیٹ کرنے کی کوشش کی گئی: شہباز گل  

اردو نیوز  |  Sep 23, 2022

پاکستان تحریک انصاف کے رہنما ڈاکٹر شہباز گل نے کہا کہ دوران حراست بار بار ان کا ہارڈ وئیر اپ ڈیٹ کر کے سافٹ وئیر کرپٹ کرنے کی کوشش کی گئی۔ عمران خان میرے ساتھ ایسے کھڑے ہوئے جیسے باپ اپنے بیٹے کے پیچھے کھڑا ہوتا ہے۔  

عمران خان کے سابق چف آف سٹاف ڈاکٹر شہباز گل ضمانت پر رہائی کے بعد پہلی مرتبہ منظر عام پر آئے اور اپنے اوپر ہونے والے مبینہ تشدد سے متعلق گفتگو کی۔ اپنے یوٹیوب چینل پر ویڈیو بیان میں انہوں نے سارے واقعے کے دوران اپنے ساتھ کھڑے رہنے والے لوگوں کا شکریہ ادا کیا۔ 

فوج میں بغاوت پر اکسانے کے مقدمے کا سامنے کرنے والے ڈاکٹر شہباز گل نے کہا کہ ’میرے اوپر جو تشدد ہوا وہ راز نہیں ہے۔ تمام محب وطن پاکستانیوں کی طرح پاکستان سے محبت کرنے کا سافت وئیر بہت پہلے سے اپ ڈیٹ تھا۔ میں گاؤں میں پیدا ہوا ہوں اور گاؤں کے لوگوں کا پیدائشی ہی اپنے وطن سے محبت کرنے کا سافٹ وئیر اپ ڈیٹ ہوتا ہے۔ اس سارے وقوعہ کے دوران میرے ہارڈ وئیر کو بار بار اپ ڈیٹ کیا گیا اور اس کے ذریعے سافٹ وئیر کو کرپٹ کرنے کی کوشش کی گئی۔‘  

واضح رہے کہ شہباز گل پر فوج میں بغاوت پر اکسانے کا مقدمہ درج ہے۔ 9 اگست کو انہیں اسلام آباد سے گرفتار کیا گیا تھا۔ شہباز گل ایک ماہ سے زائد کا عرصہ پولیس کی حراست میں رہنے کے بعد 15 ستمبر کو ضمانت پر رہا ہوئے ہیں۔

ڈاکٹر شہباز گل نے سابق وزیراعظم عمران خان کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ ’عمران خان میرے پیچھے ایسے کھڑے ہوئے جیسے باپ اپنے بیٹے کے پیچھے کھڑا ہوتا ہے۔  ‘

انہوں نے کہ کہ ’کہا جاتا ہے کہ پی ٹی آئی میں یہ رواج ہے کہ کارکن کے ساتھ کھڑے نہیں ہوتے لیکن عمران خان نے اپنے اوپر مقدمات بنوائے اپنی پرواہ نہیں کی لیکن میرے لیے آواز اٹھائی۔‘ 

شہباز گل نے کہا کہ ’میرا وعدہ سے ہے جس جذبہ سے سب کچھ چھوڑ کر پاکستان کی جنگ عمران خان کے پیچھے شروع کی تھی وہ جاری رہے گی اور اپنے اختیار کے مطابق کوشش جاری رکھوں گا۔عمران خان کے ساتھ نیا اور بہترین پاکستان کی جدوجہد جاری رہے گی۔‘  

ڈاکٹر شہباز گل نے اپنے ناقدین کو بھی مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ’میرے وہیل چیئر پر بیٹھ کر عدالت میں آنے اور ماسک مانگنے کے واقعہ کا مذاق اڑایا گیا مجھے غیر ملکی ایجنٹ قرار دینے کی کوشش کی گئی۔میں اگر صرف اس لیے ناپسند تھا کہ میں سخت بولتا ہوں تو اس کے لیے قانون موجود ہ۔ اگر کسی کے ساتھ بھی سخت بولا ہوں تو اس وجہ سے مجھ پر ہونے والے تشدد پر خوش ہونا کا مطلب ہے کہ آپ کے اندر حیوانیت موجود ہے۔‘ 

ڈاکٹر شہباز گل نے کہا کہ ‘میں وعدہ اور اعیادہ کرتا ہوں کہ آپ بھلے میرے ساتھیوں میں سے ہیں یا مخالفین میں سے ہوں، آپ کسی بھی سیاسی جماعت سے ہوں اگر آپ پر کبھی بھی ریاستی جبر ہوگا میں آپ کے ساتھ کھڑا ہوں گا بھلے وہ ہماری حکومت کے اندر ہو رہا ہو یا کسی اور کی حکومت میں ہو، شہباز گل آپ کے ساتھ کھڑا ہوگا۔‘ 

اپنے ویڈیو بیان میں انہوں نے کہا کہ ’ میں ٹاٹ سکول سے امریکہ کی دوسری بڑی یونیورسٹی تک پہنچا، امریکہ کی اندر ایک پرآسائش زندگی گزار رہا تھا لیکن ہر بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کی طرح اپنے ملک کی خدمت کرنے کا خواب تھا اور اس سب میں عمران خان روشن ستارے کے طور پر سامنے آئے اسی لیے اپنی زندگی کی اسائش چھور کر پاکستان آیا اور عمران خان کے ساتھ کھڑے ہوگئے۔‘  

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More