News Search
Home News Dictionary TV Channels Names Weather Live Cricket Videos Photos Results Naats
Home Taza Tareen
افغان فورسز کی چمن میں بلااشتعال فائرنگ، 1 شہری شہید، 18 افراد زخمی     چمن بارڈر پر افغان فورسز کی فائرنگ، 4 ایف سی جوان زخمی، آئی ایس پی آر     راجن پور: تھانہ محمد پور کی حدود میں فائرنگ،4افراد جاں بحق 1زخمی     وزیراعظم کا ویژن پاکستان کو لوڈ شیڈنگ فری بنانا ہے، عابد شیرعلی     آخری دن میزبان بولنگ کا ہمارے پاس جواب نہ تھا، مصباح الحق     بارباڈوس:ویسٹ انڈیزکےہاتھوں پاکستان کوعبرتناک شکست     سرحد پار سے مردم شماری ٹیم پر فائرنگ، چمن سرحد بند     ’مکی‘ اور ’منی‘ حقیقی زندگی میں میاں بیوی تھے     پاناما کیس، سپریم کورٹ کا آج ہی جے آئی ٹی تشکیل دینے کا فیصلہ     پنجاب: مختلف اضلاع میں سرچ آپریشن، 41 افراد گرفتار     
Urdu News
Maulana Tariq Jamil
a
Naat Khawan
Amjad Sabri Farhan Ali Qadri
Fasih Uddin Soharwardi Ghulam Mustafa Qadri
Imran sheikh Attari Junaid Jamshed
Owais Raza Qadri Shahbaz Qamar Faridi
Syed Mohammad Furqan Qadri Ummeh Habiba
Waheed Zafar Qasmi Zulfiqar Ali
UrduWire Names Directory
Muslim Names Arabic Names
Muslim Boy Names Muslim Girl Names
Pictures Gallery
Cleaning The Kaaba Area - One Of The Best Jobs In The World Cleaning The Kaaba Area - One Of The Best Jobs In The World
Dream World Water Park Resort Hotel Ticket & Membership Price 2017 Karachi Dream World Water Park Resort Hotel Ticket & Membership Price 2017 Karachi
Cosy Water Park Karachi - Cozy Ticket Price 2015 & Location Pictures Cosy Water Park Karachi - Cozy Ticket Price 2015 & Location Pictures
View all Pictures

 

Home >> Urdu News >> Voice Of America Urdu
پاکستان کی خبریں Share your views
ایک اور سماجی کارکن 'لاپتا' [وائس آف امریکہ اردو] 11 Jan, 2017

گزشتہ ہفتے ہی اسلام آباد سمیت ملک کے مختلف شہروں سے چار سماجی کارکنان لاپتا ہو گئے تھے جن میں فاطمہ جناح یونیورسٹی سے وابستہ استاد اور شاعر سلمان حیدر بھی شامل ہیں۔

ایک ہفتے کے دوران چار مختلف سماجی کارکنوں کی اچانک گمشدگی کا معاملہ ابھی حل نہیں ہو پایا تھا کہ منگل کو دیر گئے ایک اور سماجی کارکن کے اسلام آباد سے لاپتا ہونے کی خبر نے پہلے سے برہم انسانی حقوق کی تنظیموں کو مزید تشویش میں مبتلا کر دیا۔

"سول پروگریسیو الائنس پاکستان" نامی غیر سرکاری تنظیم کے سربراہ ثمر عباس کے بارے میں بتایا گیا کہ گزشتہ ہفتے سے ان کا اپنے گھر والوں سے کوئی رابطہ نہیں ہوا اور ان کا موبائل فون بھی مسلسل بند ہے۔

کراچی سے تعلق رکھنے والے 40 سالہ ثمر عباس انفارمیشن ٹیکنالوجی کے کاروبار سے بھی منسلک ہیں اور اسی سلسلے میں وہ اسلام آباد آئے ہوئے تھے۔

ان کے اہل خانہ کو شبہ ہے کہ وہ بھی قبل ازیں اچانک لاپتا ہونے والے چار سماجی کارکنوں کی طرح لاپتا ہو گئے ہیں۔

ثمر عباس خاص طور پر ملک میں اقلیتوں پر ہونے والے مظالم کے خلاف آواز بلند کرتے آ رہے ہیں۔

انسانی حقوق کمیشن پاکستان کے سابق چیئرمین ڈاکٹر مہدی حسن نے بدھ کو وائس آف امریکہ سے گفتگو میں ثمر عباس کی گمشدگی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اگر حکومت نے ایسے واقعات کے تدارک کے لیے سنجیدہ اقدام نہ کیے تو یہ معاشرہ جنگل بن جائے گا۔

"لوگوں کی حفاظت کرنا حکومت کی ذمہ داری ہے خواہ ان کے نظریات کچھ بھی ہوں بہرحال زندہ رہنے کا حق تو ہر کسی کا بنیادی حق ہے اور حکومت کی ذمہ داری ہے کہ وہ سب کی حفاظت کرے۔ اس طرح تو پھر یہ (معاشرہ) جنگل بن جائے گا جہاں ہر طاقتور اپنے سے کمزور پر یا محروم طبقے جو ہیں ان پر ظلم کرے گا تو پھر مسئلہ بہت ٹیڑھا ہو جائے گا۔"

گزشتہ ہفتے ہی اسلام آباد سمیت ملک کے مختلف شہروں سے چار سماجی کارکنان لاپتا ہو گئے تھے جن میں فاطمہ جناح یونیورسٹی سے وابستہ استاد اور شاعر سلمان حیدر بھی شامل ہیں۔

سلمان حیدر کے بارے میں پولیس کی اب تک کی تحقیقات کے بارے میں شائع ہونے والی خبروں کے مطابق انھیں اسلام آباد ایکسپریس وے پر دو گاڑیوں پر سوار پانچ افراد زبردستی اپنے ساتھ لے گئے تھے۔

ان گمشدگیوں کے خلاف منگل کو اسلام آباد اور لاہور میں سول سوسائٹی اور انسانی حقوق کی تنظیموں نے احتجاجی مظاہرہ بھی کیا تھا۔

ڈاکٹر مہدی حسن کہتے ہیں کہ تفتیش کرنے والوں کو ایسے عناصر پر بھی نظر رکھنی چاہیے جو عسکریت پسندی کے حامی اور طاقت کے استعمال کی دھمکیاں دیتے ہیں۔

"میں یہ سمجھتا ہوں کہ یہ انٹیلی جنس سروسز کا بھی کام ہے وہ اس انداز سے بھی سوچیں کہ جو دائیں بازو کی قوتیں ہیں اور خاص طور پر جو عسکریت پسندی پر یقین رکھتی ہیں اور اعلانیہ کہتی ہیں کہ وہ طاقت استعمال کر سکتی ہیں یا کرنا چاہتی ہیں ان پر بھی نظر رکھنی چاہیے اور تحقیقات میں ان کو بھی شامل کرنا چاہیے۔"

وفاقی وزیرداخلہ چودھری نثار علی خان نے ایک روز قبل ہی ایوان بالا کو آگاہ کیا تھا کہ حکومت چاروں گمشدہ سماجی کارکنوں کی بازیابی کے لیے موثر کوششیں کر رہی ہے اور ان کے بقول اس ضمن میں تفتیش کار درست سمت میں پیش رفت کر رہے ہیں۔

تاہم ثمر عباس کے بارے میں تاحال حکومت یا پولیس کی طرف سے کوئی بیان سامنے نہیں آیا ہے۔


View News As Image
Post Your Comments
Select Language:    
Type your Comments / Review in the space below.

Name: Email:(Will not be shown) City:
Enter The Code:

 
Home | About Us | Contact Us |  Profiles |  Privacy Policy & Disclaimer | What is Meta News?
Top Searches: Jang News Cricinfo Express Tribune,  , SSC Part 1 Results 2016   Dunya News Bol News Live Samaa News Live Metro 1 News Waqt News Hum TV PTV Sports Live KTN News
Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on "as it is" based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Please read more!

UrduWire.com - First ever Urdu Meta News portal