بھارت میں ایک اورکم عمرلڑکی جنسی درندگی کاشکار

بول نیوز  |  Jan 14, 2020

بھارت میں ایک بار پھرجنسی درندگی کا افسوسناک اور اندوہناک واقعہ پیش آیاہے ۔ کم عمر لڑکی کواغوا کےبعد اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایاگیاہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق ریاست اوڈیشا میں آٹھویں جماعت کی 13 سالہ لڑکی کو تین افراد نے اغوا کر کے 36 گھنٹوں تک حبس بے جا میں رکھا اور اجتماعی زیادتی کا نشانہ بناتےرہے، بعد ازاں ملزمان لڑکی کو نیم بے ہوشی کی حالت میں اس کے گھر کے قریب پھینک کر فرار ہوگئے۔

متاثرہ لڑکی نے پولیس کو اپنے بیان میں بتایاکہ ایک جاننے والے لڑکے سے راستہ پوچھا جس پر وہ لڑکا اسے اپنے ہمراہ لے گیا اور زبردستی کرنے کی کوشش کی تاہم لڑکی کے انکار پر اس نے اپنے دو دوستوں کو بلا کر لڑکی کو اغوا کرکے ایک کمرے میں 36 گھنٹے تک قید میں رکھا۔ اور اجتماعی زیادتی کا نشانہ بناتے رہے۔

 پولیس نے روایتی سست روی کا مظاہرہ کرتےہوئے شہریوں کےدباؤ کے بعدمقدمہ درج کرکے ملزمان کی گرفتاری کے لیے چھاپہ کارروائی کا آغاز کر دیا ہے۔

واضح رہے کہ خواتین سے جنسی زیادتی کے بڑھتے ہوئے واقعات کی وجہ سے بھارت کو ’ریپستان‘ کہاجانےلگاہے۔

 گزشتہ سال بھارت میں زیادتی کےکیسزمیں اضافہ ہواتھا۔ نومبر2019  میں حیدرآباد دکن میں  27 سالہ ویٹرنری ڈا کٹرکوچارملزمان نے اجتماعی زیادتی کےبعد قتل کردیا تھا،تاہم  واقعے کے کچھ  دنوں بعدچاروں ملزمان  پولیس انکاؤنٹرمیں مارےگئےتھے  ۔

گزشتہ  سال  دسمبر میں  بھارتی  ریاست  اترپردیش کے فتح پور ضلع میں مبینہ طور پر اپنے ہی چاچو کے ہاتھوں  زیادتی کا شکار بننے والی لڑکی کو اس کے چاچو نے زندہ جلا دیا۔

اپنی بھتیجی کو زندہ جلانے کے بعد ملزم موقع سے فرار ہو گیا جسے بعد ازاں کانپور کے قریب ایک گاوں سے گرفتار کر لیا گیاتھا ۔

 

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More