یمن میں ڈینگی 78 بچوں کو نگل گیا، وارننگ جاری

بول نیوز  |  Jan 14, 2020

جنگ سے متاثرہ یمن میں کم از کم 78 بچے جان لیوہ  وبا ڈینگی اور دوسری بیماریوں سے متاثر ہو کر جاں بحق ہوگئے۔

امدادی گروپ کیا جانب  سے جاری کردہ  ایک بیان میں کہا  گیا کہ ، “یمن میں ڈینگی سے وابستہ بیماری کے پھیلنے سے پہلے ہی 18  بچے دم توڑ چکے ہیں  اور ملک بھر میں 52،000، سے زیادہ مشتبہ واقعات درج کیے گئے ہیں۔

“سیو دی چلڈرن این جی او نے کہا کہ یمن میں گزشتہ سال ڈینگی سے متعلقہ بیماریوں سے مجموعی طور پر 192 افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں زیادہ تر مقدمات بندرگاہی شہر ہوڈیڈا اور عدن میں رپورٹ ہوئے۔

یمن میں بچوں کے فیلڈ کوآرڈینیٹر مریم الڈوگانی نے کہا ، “ہوڈیڈا ملک میں مرنے والوں کی شرح ملک میں دوسرے نمبر پر ہے جس میں 2019 میں 62 بالغ اور بچوں کی اموات ہوئیں۔

ہم نے ایسا پہلے کبھی نہیں دیکھا۔””ہمارے 40 سے زائد عملہ بشمول ان کے اہل خانہ بخار سے متاثر ہوئے ہیں۔

یمن میں ڈاکٹرز، این جی اوز  اور امدادی گروپ افراد  کو  امدادی سامان فراہم کر رہے ہیں اور لوگوں کو احتیاطی  تدابیر استعمال  کرنے کی ہدایت بھی کر رہے ہیں۔

واضح  رہے کہ  سن 2015 میں جنگ کے آغاز سے اب تک دسیوں ہزار افراد ، جن میں زیادہ تر عام شہری ہیں ، ہلاک اور لاکھوں افراد قحط کے دہانے پر پہنچ گئے ہیں۔ اس نے اقوام متحدہ کو دنیا کا بدترین انسانیت سوز بحران قرار دیا ہے۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More