جب ریپ کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے جج بے ہوش ہوگئیں

اردو نیوز  |  Feb 15, 2020

انڈیا کی سپریم کورٹ میں دہلی گینگ ریپ کیس کی سماعت کے دوران فیصلہ سناتے ہوئے ایک جج کمرہ عدالت میں بے ہوش ہو گئیں۔

انڈین ٹی وی چینل این ڈی ٹی وی کے مطابق جسٹس بانومتھی ان کے ساتھی جج وہیل چئیر پر طبی معائنے کے لیے چیمبر میں لے گئے جہاں وہ جلد ہوش میں آگئیں۔

انڈیا کے شہر دہلی میں 2012 میں ایک لڑکی کے ساتھ جنسی زیادتی ہوئی تھی جس کے بعد چار مجرموں کو سزائے موت سنائی گئی تھی۔ جمعے کو سپریم کورٹ میں اس کیس کے چاروں مجرموں کو الگ الگ پھانسی دینے کی درخواست پر سماعت ہو رہی تھی۔

مزید پڑھیںانڈیا میں ایک اور لڑکی کا ریپ، ’کیا یہ جرم کا موسم ہے‘Node ID: 446451ریپ کے ملزمان پولیس فائرنگ میں ہلاکNode ID: 446916دہلی ریپ کیس کے مجرموں کی پھانسی ملتویNode ID: 456331کیس کی سماعت کر رہے بینچ میں شامل جج جسٹس اے ایس بوپنا نے بانومتھی کی بے ہوشی کے بعد عدالت میں کہا کہ اس کیس پر فیصلہ چیمبر میں سنایا جائے گا جس کے بعد کیس کی سماعت آئندہ ہفتے تک ملتوی کر دی گئی۔

اس سے قبل سپریم کورٹ نے سزائے موت پانے والے چار مجرموں میں سے ایک، ونے شرما، کی اپیل مسترد کر دی تھی۔ ونے شرما نے انڈیا کے صدر رام ناتھ کووند کے فیصلے کو چیلنج کرتے ہوئے سپریم کورٹ میں اپیل دائر کی تھی۔

واضح رہے کہ انڈین صدر نے ونے شرما کی رحم کی اپیل کو مسترد کر دیا تھا۔

سپریم کورٹ کیس کے دو مجرموں کی اپیل مسترد کر چکا ہے (فائل فوٹو: اے ایف پی)ونے شرما نے سپریم کورٹ میں دعویٰ کیا تھا کہ صدر رام ناتھ کووند ان کی رحم کی اپیل کو مسترد کرتے وقت جیل میں ان پر ہونے والے تشدد اور اس تشدد کے دماغی اثرات کو زیر غور نہیں لائے تھے۔

ونے شرما کی اس اپیل کو کو رد کرتے ہوئے حکومت نے کہا تھا کہ ان کی دماغی حالت بالکل ٹھیک ہے۔

سپریم کورٹ نے اس سے قبل اس کیس کے ایک اور مجرم، مکیش کمار سنگھ کی بھی پھانسی روکنے کی درخواست مسترد کی تھی۔

مکیش کمار سنگھ نے بھی صدر کی جانب سے رحم کی اپیل مسترد ہونے پر درخواست دائر کی تھی۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More