صدر پاکستان اور وزیرخارجہ کے کورونا ٹیسٹ منفی

اردو نیوز  |  Mar 24, 2020

پاکستان کے صدر ڈاکٹر عارف علوی اور وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کے چین سے وطن واپسی پر مقامی طور پر کیے گئے کورونا ٹیسٹ کی رپورٹس بھی منفی آئی ہیں۔ 

دوسری جانب پاکستان کے صوبہ سندھ کے وزیر تعلیم سینیٹر سعید غنی کے ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد فیصلہ کیا گیا ہے کہ اہم حکومتی شخصیات کے بھی کورونا ٹیسٹ کیے جائیں گے۔

صدر پاکستان اور وفد کے دیگر ارکان کے دورہ چین پر پہنچنے اور واپسی پر چین میں لیے گئے ٹیسٹوں کے بارے میں چینی وزارت خارجہ پہلے ہی رپورٹ بھجوا چکی ہے جو کہ منفی تھی۔  

مزید پڑھیںوزیر تعلیم سندھ بھی کورونا کا شکار، کل مریض 875Node ID: 466546تبلیغی جماعت کے پانچ افراد میں کوروناNode ID: 466576کورونا کے مریض کے ساتھ سیلفی لینے پر چھ اہلکار معطلNode ID: 466671

ایوان صدر اور وزارت خارجہ کے حکام کے مطابق دونوں رہنماؤں کے وطن واپسی کے کچھ دنوں بعد دوبارہ ٹیسٹ لیے گئے تھے وہ بھی منفی آئے ہیں۔ 

صدر کے پریس سیکرٹری کے مطابق صدر مملکت ابھی تک کورونا وائرس کے حوالے سے طے شدہ اصول و ضوابط پر عمل کرتے ہوئے قرنطینہ میں ہیں اور ساتھ ساتھ آگاہی بھی دے رہے ہیں۔ 

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی بھی سیلف آئسولیشن اختیار کرتے ہوئے اپنے گھر سے ہی دفتر معاملات دیکھ رہے تھے۔ اس دوران انھوں نے فرانس سپین اور ایران سمیت متعدد ممالک کے وزرائے خارجہ سے رابطے بھی کیے۔ 

وزیر اعظم عمران خان کا کورونا ٹیسٹ ہوا ہے یا نہیں اس حوالے سے ان کے ترجمانوں نے لاعلمی کا اظہار کیا ہے۔ تاہم یہ بتایا گیا ہے کہ وزیر اعظم ہاؤس یا وزیر اعظم آفس میں ہونے والے اجلاسوں اور ملاقاتوں سے قبل تمام شرکاء کی تھرمل سکریننگ کی جاتی ہے۔

وزیر اعظم ہاتھ نہ ملانے کی پالیسی پر سختی سے عمل پیرا ہیں۔ ملاقات کے لیے آنے والوں اور سٹاف کا وزیر اعظم سے کم از کم ایک میٹر فاصلہ بھی یقینی بنایا جاتا ہے۔ روزانہ کی بنیاد پر وزیر اعظم کے دفتر اور ذاتی استعمال کی اشیاء سے جراثیم دور کرنے کا عمل دہرایا جا رہا ہے۔ 

قائد حزب اختلاف شہباز شریف لندن سے وطن واپسی پر قرنطینہ میں ہیں۔ فوٹو اے ایف پی

یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ چئیرمین و ڈپٹی چیئرمین سینیٹ، سپیکر و ڈپٹی سپیکر ،تمام وفاقی وزراء، ارکان پارلیمنٹ اور پارلیمنٹ ہاؤس کے عملے کے بھی کورونا ٹیسٹ کیے جائیں گے۔ 

سینیٹ آف پاکستان کے ترجمان کے مطابق ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سلیم مانڈی والا نے اپنی طرف سے پانچ ہزار کورونا ٹیسٹ کٹس منگوائی ہیں۔ ان کٹس سے پارلیمنٹ کے تمام ارکان و عملے کے ٹیسٹ کیے جائیں گے۔ 

پاکستان کی سیاسی قیادت میں سے قائد حزب اختلاف شہباز شریف لندن سے وطن واپسی پر قرنطینہ میں ہیں۔ ان کی ابتدائی سکریننگ کا عمل ائیرپورٹ پر ہی کر لیا تھا تاہم ایک دو روز میں ان کا کورونا ٹیسٹ کیا جائے گا۔ 

سندھ کے صوبائی وزیر سعید غنی کی کورونا ٹیسٹ رپورٹ مثبت آنے کے بعد یہ اعلان کیا گیا تھا کہ وزیر اعلیٰ مراد علی شاہ، ان کی کابینہ سمیت بلاول بھٹو زرداری کا بھی کورونا ٹیسٹ کیا جائے گا۔ 

لیکن بلاول بھٹو زرداری کے حوالے سے پیپلزپارٹی کے میڈیا سیل کا کہنا ہے کہ ان کی سعید غنی سے حالیہ دنوں میں کوئی ملاقات نہیں ہوئی اس لیے ان کے ٹیسٹ کی ضرورت محسوس نہیں کی جا رہی۔

دوسری جانب وفاقی وزیر سائینس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چودھری کے امریکہ واپسی پر لیے گئے ٹیسٹ کی رہورٹ منفی آئی ہے۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More