تصاویر: کروناوائرس کے سائے میں مسجد حرام میں ختم قرآن

سماء نیوز  |  May 22, 2020

رمضان مبارک میں معمول تھا کہ مسجد الحرام کے اندر ختم قرآن کی رات 20 لاکھ سے زیادہ نمازی صفوں میں موجود ہوتے تھے، اس روز لوگ کافی وقت پہلے سے ہی حرم مکی کا رخ کر لیا کرتے تھے، اس طرح کی مبارک شب میں حرم شریف کی راہ داریاں، بالائی منزلیں اور چھت نمازیوں سے کھچا کھچ بھر جاتی تھی، یہ لوگ 29 ویں شب میں ختم قرآن کے موقع پر نماز عشاء اور تراویح کی ادائیگی میں شریک ہوتے تھے۔

اس بار مسجد الحرام میں ختم قرآن کی شب گذشتہ برسوں سے مختلف تھی، دنیا بھر میں پھیلی کرونا وائرس کی وباء کے سبب احتیاطی اقدامات اور حفاظتی اقدام کی نیت سے نمازیوں کی تعداد کو نہایت کم کر دیا گیا تھا، اس بار ختم قرآن کے موقع پر بیت اللہ کا صحن معمول سے یکسر مختلف منظر پیش کررہا تھا۔

 

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق مسجد الحرام اور مسجد نبوی کے امور کی جنرل پریذیڈنسی نے ماہ رمضان کے دوران کئی احتیاطی اقدامات کئے، جبکہ سیکیورٹی اور صحت کے شعبے سے متعلق اداروں کے تعاون سے حفاظتی اقدامات میں اضافہ کردیا گیا، اس کا مقصد حرمین شریفین میں نمازیوں کی صحت و سلامتی کو یقینی بنانا ہے۔

ان اقدامات کے تحت مسجد الحرام کے دروازوں اور داخلی راستوں پر تھرمل کیمرے نصب کئے گئے، جو خود کار طریقے سے انسانوں کے درجہ حرارت کی جانچ کرتے ہیں۔

مسجد الحرام میں اس بار 29 ویں شب پر سماجی فاصلے کو برقرار رکھتے ہوئے انتہائی کم تعداد میں نمازیوں نے ختم قرآن میں شرکت کی۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More