بالی ووڈ کی معروف کوریوگرافر سروج خان انتقال کرگئیں

اب تک  |  Jul 10, 2020

نئی دہلی:(03 جولائی 2020) معروف بالی ووڈ کوریوگرافر سروج خان دل کی دھڑکن بند ہونے کے باعث آج صبح ممبئی کے مقامی اسپتال میں انتقال کرگئیں۔

بھارت میڈیا کے مطابق وہ پچھلے کئی مہینوں سے دل کی تکلیف میں مبتلا تھیں اور ممبئی کے ایک مقامی اسپتال میں داخل تھیں۔ ان کا کورونا ٹیسٹ منفی آیا تھا۔

سروج خان کے بھانجے منیش جاگوانی نے پریس ٹرسٹ آف انڈیا کو بتایا کہ آج تین جولائی 2020 کو علی الصبح اچانک دل کی دھڑکن بند ہوجانے سے ان کا انتقال ہوا۔

سروج خان کی موت پر بالی ووڈ کے تمام بڑے اداکاروں اور کوریوگرافرز نے گہرے رنج و غم کا اظہار کیا ہے اور اسے انڈین فلم انڈسٹری کےلیے ایک ناقابلِ تلافی نقصان قرار دیا ہے۔

فوٹو اور ویڈیو شیئرنگ ایپ انسٹاگرام پر نامور اداکارہ و ڈانسر مادھوری ڈکشت نے اپنی اور سروج خان کی ایک تصویر شیئر کی ہے اور ساتھ ہی انہوں نے کیپشن میں لکھا کہ آج میں گہرے صدمے میں ہوں، میرے پاس الفاظ نہیں ہیں اپنا دکھ بیان کرنے کے لیے۔ سروج جی اُس وقت سے میرے ساتھ تھیں جب میں نے بالی ووڈ میں قدم رکھا۔

مادھوری نے لکھا کہ انہوں نے مجھے بہت کچھ سیکھایا ہے صرف رقص کے بارے میں نہیں بلکہ ہر چیز کے بارے میں، اس وقت میرے دماغ میں اُن کی یادوں کا رش ہے۔

اداکارہ نے مزید لکھا کہ اُن کے اہل خانہ سے میرے دلی تعزیت ہے۔

بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق سروج خان کا اصل نام نرملا ناگپال تھا، وہ 1948 میں ممبئی میں پیدا ہوئیں۔ انہوں نے صرف تین سال کی عمر سے فلموں میں بطور چائلڈ آرٹسٹ کام شروع کردیا تھا جبکہ نوعمری میں بیک گراؤنڈ ڈانسر کے طور پر بھی دکھائی دیں۔

ڈانس ڈائریکٹر کی حیثیت سے انہوں نے تقریباً 40 سال تک بالی ووڈ فلم نگری پر حکمرانی کی اور بھارت میں ’’مادرِ رقص‘‘ (مدر آف کوریوگرافی) کا خطاب بھی اپنے نام کیا۔

تاہم جلد ہی انہوں نے ڈانس ڈائریکشن اور کوریوگرافی کو اپنا کیریئر بنا لیا اور 2000 سے زائد بالی ووڈ اور تامل فلموں میں کوریوگرافی/ ڈانس ڈائریکشن کی جو بجائے خود ایک ریکارڈ ہے۔

ان کی کوریوگراف کی ہوئی فلموں میں ہیرو، مسٹر انڈیا، تیزاب، چاندنی، سیلاب، ڈر، آئینہ، بازی گر، مہرہ، دل والے دلہنیا لے جائیں گے، ہم دل دے چکے صنم، تال، لگان، دیوداس، منگل پانڈے، فنا، جب وی میٹ، دلی 6، اے بی سی ڈی اور گلاب گینگ جیسی سپر ہٹ فلمیں شامل ہیں۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More