پٹائی کے بعد طلال چوہدری مزید مشکلات کا شکار، پارٹی میں طلال کے خلاف آوازیں بلند

روزنامہ اوصاف  |  Sep 27, 2020

فیصل آباد(ویب ڈیسک )طلال چوہدری اسپتال میں زیرعلاج،ن لیگ کاکوئی بھی اہم رہنماملنےنہ آیا ۔۔ طلال چوہدری کوپارٹی میں شدیدمشکلات کاسامنا ۔۔۔فیصل آبادمیں پارٹی کابڑادھڑاطلال چوہدری کےخلاف ۔۔ طلال چوہدری کے خلاف ایکشن کا مطالبہتفصیلات کے مطابق گزشتہ روز مسلم لیگ ن کے رہنما طلال چوہدری کون لیگی ایم این اے عائشہ رجب بلوچ کے بھائیوں نے تشدد کا نشانہ بنا دیا تھا، جس کے باعث ان کا بازو 2 جگہ سے فریکچر ہوگیا، الزام لگایا گیا کہ طلال چوہدری نے عائشہ رجب بلوچ کو مبینہ طور پر ہراساں کرنے کی کوشش کی تھی۔اس سلسلے میں آج پنجاب پولیس نے ایس ڈی پی عبدالخالق کی سربراہی میں فیکٹ فائنڈنگ کمیٹی بنا دی ہے، 4 رکنی کمیٹی میں ایس ایچ او تھانہ مدینہ ٹاؤن، ایس ایچ او وومن پولیس کو شامل کیا گیا ہے۔یہ کمیٹی طلال چوہدری اور ایم این اے عائشہ رجب کے بیانات ریکارڈ کرے گی، کمیٹی تحقیقات کی روشنی میں قانونی کارروائی بھی تجویز کرے گی، فیکٹ فائنڈنگ کمیٹی کو 3 دن میں رپورٹ جمع کرانے کی ہدایت کی گئی ہے۔دوسری جانب ذرائع کے مطابق ن لیگ کی جانب سے کیس کو دبائے جانے کی خبریں سامنے آ رہی ہیں، دوسری طرف طلال چوہدری کو عائشہ رجب سے تنازع کے بعد پارٹی میں مشکلات کا سامنا ہے، فیصل آباد ڈویژن میں پارٹی کا بڑا دھڑا طلال چوہدری کے خلاف کھڑا ہوگیا ہے۔رانا ثنا اللہ کے دھڑے کی جانب سے بھی طلال چوہدری کے خلاف ایکشن لینے کا مطالبہ کیا گیا ہے، خواتین ارکان کی جانب سے بھی طلال چوہدری کے خلاف کارروائی کے لیے رابطے کیے جا رہے ہیں، ذرائع کے مطابق ن لیگ کا کوئی بھی اہم رہنماطلال چوہدری سے ملنے نہیں آیا۔طلال چوہدری واقعے پولیس کا کہنا ہے طلال چوہدری 2 بجکر 40 منٹ پر عبداللہ گارڈن پہنچے، کالونی گیٹ پر روکنے پر گارڈ سے تلخ کلامی ہوئی۔پولیس کے مطابق گارڈ نے کہا کہ جس گھر جارہے ہیں، وہاں بات کرائیں لیکن طلال چوہدری زبردستی چلے گئے، طلال چوہدری ڈرائیور کے ہمراہ گئے، گھر داخل ہوتے ہی انہیں مارپڑی۔جبکہ علاقہ مکینوں کے مطابق طلال چوہدری کی ایک سال سے گھر میں آمدورفت تھی، طلال چوہدری نے پھینٹی کے بعد گھر سے نکل کر سیکیورٹی گارڈز کو مدد کیلئے پکارا۔
مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More