گاجر

روزنامہ اوصاف  |  Sep 28, 2020

برصغیر کی مشہورترین سبزی ہے۔ تاثیر کے لحاظ سے گرم تر ہے۔ بظاہر جتنی کم خرچ باطنی طور پر اتنی ہی مفید قدرت نے گاجر میں ایسے عناصر رکھ دیئے ہیں کہ اگر انسان انہیں استعمال میں لائے تو اس کی نشوونما اور امراض کا مقابلہ کرنے قوت میں پیدا ہو جائے۔ گاجر کا رس پینا مفید ہے ۔ گاجر ایک ایسی سبزی ہے جو غذائیت سے بھرپور بھی ہے اور ہر انسان اس کی قوت خرید بھی رکھتا ہے۔عام طور پر یہ سمجھا جاتا ہے کہ بہت زیادہ مہنگی سبزیوں یا پھلوں میں ہی زیادہ طاقت اور توانائی ہوتی ہے لیکن ایسا نہیں بعض ایسی سبزیاں بھی ہیں جن کی قیمت نہایت مناسب ہے۔ مگر ان کے غذائی اجزاء بہت قیمتی ہیں ایسی ہی ایک سبزی گاجر بھی ہے۔ مگر ہم اس کے فوائد سے مکمل طور پر نا واقف ہیں اس مضمون کو غور سے پڑھیے تب آپ کو معلوم ہو گا کہ گاجر کے ذریعے ہم اپنے جسم کو کتنی قوت اور توانائی فراہم کر سکتے ہیں۔گاجر ایک مشہور جڑ ہے۔ اس ذائقہ دار جڑ کو ہم کچا بھی کھاتے ہیں اور یہ پکا کر بھی کھائی جاتی ہے اور بطور دوا بھی کھایا جاتا ہے۔بصارت کی تیزیاگر گاجر بکثرت کھائی جائے تو بصارت تیز ہوتی ہے۔پتھری اور یرقان کا خاتمہمثانے‘گردے کی پتھری کے لئے گاجر بہت مفید ہے اسے کھانے سے پیشاب کھل کر آتا ہے اور گردے اور مثانے کی پتھری ٹوٹ کر خارج ہو جاتی ہے۔گاجر کا جوس پینے سے یرقان ختم ہوتا ہے۔جسم کی نشوونمانئی تحقیقات سے ثابت ہوا ہے کہ گاجر میں نشاستہ‘شکر‘فولاد‘چونا‘فاسفورس‘نمکیات پائے جاتے ہیں۔ جو بہترین انداز میں جسم کی نشوونما کرتے ہیں اور جسم کو مضبوط بناتے ہیں۔دل و دماغ کی تیزیگاجر دل و دماغ کو طاقت دیتی ہے کیونکہ اس میں تمام غذائی اجزاء پائے جاتے ہیں ۔یہ بدن کو طاقتور اور فربہ بنانے کے ساتھ ساتھ دل اور دماغ کے لئے بھی بہت فائدہ مند ہے۔ دل کی کمزوری اور دھڑکن کے لئے خاص طور پر مفید ہے۔ دل کو مضبوط بنانے کے لئے خاص طور پر اس کا مربہ بہت مفید ہے۔آنکھوں کی حفاظتہماری آنکھوں کے لئے گاجر اکسیر کا درجہ رکھتی ہے۔ گاجر میں حیاتین الف‘ب اور ج پائے جاتے ہیں۔ اس لئے یہ بینائی کو قوت دیتی ہے۔نظر کی کمزوری میں کثرت سے گاجر کھانے سے بینائی پر خوشگوار اثرات مرتب ہوتے ہیں۔
مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More