خلابازوں نے پاکستانی بچوں کی خواہش پوری کردی

سماء نیوز  |  Oct 15, 2020

 

کراچی کےاسکول کے کچھ بچوں نے خلائی مشن اورخلا بازوں سے متعلق سوالات کئے تو خلائی امور کے بین الاقوامی ماہرین اور خلا بازوں نے ان کے جوابات دے کر بچوں کوحیران کردیا۔

بچوں کی ٹیچر نے ٹویٹر پر جاری پیغام میں اپنے طالبعلموں کے نام اور عمر کے ساتھ خلا بازوں سے کچھ سوالات پوچھے۔چوتھی کلاس کے ان بچوں نے خلا بازوں سے پوچھا کہ ہم نے آپ کے بارے میں اپنی کتابوں میں پڑھا ہے اور آپ کی مہم جوئی میں بہت دلچسپی ہے۔ بچوں نے خلا بازوں کی تعریف کی اور ان سے درخواست کی کہ جب ان کے پاس وقت ہوتووہ ان کےسوالات کے جوابات دیں۔

ان میں سے ایک بچی نے خلا بازوں سے سوال کیا کہ کیا مشتری سیارے پر ہیروں کی بارش ہوتی ہے؟ اس پر ناسا کے سائنس دان کیون گل نے جواب دیا کہ کچھ ستاروں پر ہیروں جیسی بارش ہوتی ہے۔ انھوں نے کیمیائی تبدیلیوں کے نتیجےمیں ہونے والی اس بارش کو آسان الفاظ میں بھرپور طریقے سے ٹویٹ کےذریعے سمجھایا۔

ایک بچی نے خلائی جہاز میں استعمال ہونے والے ایندھن کے حوالےسے سوال کیا تو ایملی کلینڈریلی نے اپنے ٹویٹ میں بچوں کے لیے سہل انداز میں اس کا جواب دیا۔

ایک خلا باز نے خلائی مشن کے راستہ بھٹک جانے سے متعلق سوال پر مزےدار انداز میں بتایا کہ انھیں اس بات سے کبھی خوف نہیں آیا کہ خلا میں ان کا مشن گم ہوجائے گا کیوں کہ سیارہ زمین قریب ہی ہوتی ہے۔ انھوں نے خلا سے لی گئی کراچی کی ایک تصویر بھی شئیر کی اور لکھا کہ کیا آپ اپنا اسکول اس تصویر میں تلاش کرسکتے ہیں؟

Rayyan – I wasn’t scared we’d get lost. We had the Earth nearby, and used the stars to steer. I felt especially comforted when I flew over home. Here’s a photo I took of Karachi – can you find your school? https://t.co/QBgI7W7weC pic.twitter.com/qrUYHr8GqY

— Chris Hadfield (@Cmdr_Hadfield) October 14, 2020

 

بچوں کے ٹیچر نے اپنے ٹویٹ میں مزید بتایا کہ ان کے طالبعلموں نے زور دیا تھا کہ کوشش کی جائے کہ اصل خلا باز ہی ان کے سوالات کے جوابات دیں اور کوئی اور بہروپیا صرف خوش کرنے کےلیے جواب نہ دے۔

Rayyan came to class COMPLETELY cynical with no questions at all because he was convinced no one would reply. He started getting enthusiastic when all the other kids read out their questions.

His is the only question left unanswered. Can’t wait for a response! https://t.co/khEgEYJWyF

— Aimun (@bluemagicboxes) October 14, 2020

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More