محمد رضوان اور فخر زمان کی 113 رنز کی شراکت نے خیبرپختونخوا کو فائنل میں پہنچا دیا

نوائے وقت  |  Oct 17, 2020

لاہور( سپورٹس رپورٹر ) کپتان محمد رضوان اور فخر زمان کی 113 رنز کی ابتدائی شراکت کی بدولت خیبرپختونخواکی ٹیم  نیشنل ٹی ٹونٹی کپ کے فائنل میں پہنچ گئی ہے۔ خیبرپختونخوا نے  ایونٹ کے دوسرے سیمی فائنل میں سندھ کو 8 وکٹوں کے بھاری مارجن سےشکست دے کر فائنل میں رسائی حاصل کی۔ پنڈی کرکٹ سٹیڈیم راولپنڈی میں کھیلے گئے میچ میں خیبرپختونخوا نے  143 رنز کا ہدف 2 وکٹوں  کے نقصان پر حاصل کرلیا۔ کپتان محمد رضوان اور فخر زمان نے کریز سنبھالتےہی جارحانہ انداز اپنایاتو سندھ کے باؤلرز دباؤ کا شکار ہوگئے۔ دونوں کھلاڑیوں کے درمیان 65 گیندوں پر 113 رنز کی شراکت نے کے پی کی فتح میں اہم کردار ادا کیا۔ کپتان محمد رضوان نے50گیندوں پر67 رنز کی اننگز کھیلی۔ ان کی اننگز میں 11چوکے شامل  تھے۔بائیں ہاتھ کے اوپنر  فخر زمان 29 گیندوں پر 8 چوکوں اور 2 چھکوں کی مدد سے  57 رنز بناکر آؤٹ ہوئے۔دونوں کھلاڑیوں کو دانش عزیز نے رخصت کیا۔ اوپنرز کے پویلین واپس لوٹنے پر تجربہ کارمحمد حفیظ  اور شعیب ملک نے کریز سنبھالی، دونوں بلے باز بالترتیب 12 اور 6 رنز بناکرناقابل شکست رہے۔خیبرپختونخوا نے مطلوبہ ہدف 14.5 اوورز میں حاصل کرلیا۔ اس سے قبل محمد رضوان نے ٹاس جیت کر پہلے فیلڈنگ کا فیصلہ کیا تو سندھ کی مضبوط بیٹنگ لائن اپ میچ کے آغاز سے ہی مشکلات کا شکار نظر آئی۔ فاتح ٹیم کی عمدہ باؤلنگ کے سامنے شرجیل خان صفر، اسد شفیق 1، اعظم خان صفر، سہیل خان 9، سرفراز احمد4، انور علی 3، محمد حسنین 1اور غلام مدثر 1 رنز بناکر آؤٹ ہوئے۔ سندھ کے صرف 2 کھلاڑی ہی ڈبل فگرز میں داخل ہوسکے۔ خرم منظور74 اوردانش عزیز 39 رنز بناکر آؤٹ ہوئے۔ دونوں بلے بازوں نے چھٹی وکٹ کے  لیے 80 رنز کی شراکت قائم کی۔سندھ کی پوری ٹیم 19.5 اوورز میں 142 رنز بناکر آؤٹ ہوئی۔ میچ میں شاندار اننگز کھیلنے پر خیبرپختونخوا کے  کپتان محمد رضوان کو مین آف دی میچ کاایوارڈ دیا گیا۔ ایونٹ کا فائنل سدرن پنجاب اور خیبرپختونخوا کے  درمیان اتوار کی شام ساڑھے  سات بجے  کھیلا جائے  گا۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More