ٹرمپ کو شکست: ٹک ٹاک پر پابندی کا فیصلہ ملتوی

ہم نیوز  |  Nov 13, 2020

ڈونلڈ ٹرمپ کو صدارتی انتخابات میں شکست ہونے کے بعد امریکی حکومت نے ٹک ٹاک پر فوری پابندی کا فیصلہ ملتوی کر دیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق امریکی حکومت نے اعلان کیا تھا کہ بارہ نومبر سے امریکا میں ٹک ٹاک پر پابندی عائد کر دی جائے گی۔

بعدازاں اکتیس اکتوبر کو امریکی ریاست پنسلوانیا کی عدالت نے حکومت کو ٹک ٹاک پر پابندی لگانے سے روک دیا تھا۔

امریکی حکومت نے واضح کیا ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ کی شکست اور نئے صدر کے عہدے سنبھالنے تک قانونی پیچیدگیوں کے باعث فوری طور پر ٹک ٹاک پر پابندی نہیں لگائی جا سکتی۔

یاد رہے کہ صدر ٹرمپ نے7 اگست کو ایک ایگزیکٹیو آرڈر کے ذریعے ٹک ٹاک کی مالک کمپنی بائٹ ڈانس کے ساتھ ہر قسم کی لین دین پر پابندی عائد کی تھی۔

اس حکم نامے میں کہا گیا تھا کہ امریکہ کو قومی سلامتی کے پیشِ نظر ٹک ٹاک کے مالکان کے خلاف جارحانہ کارروائی کرنا ہوگی۔

ویڈیو ایپلی کیشن کی انتظامیہ نے ایک بیان میں کہا تھا کہ امریکی صدر ٹرمپ کی جانب سے ان پر لگائے گئے الزامات بے بنیاد اور عالمی مارکیٹ کے قوانین کے خلاف ہیں۔ بیان میں کہا گیا تھا کہ امریکی صدر ایک امریکی کمپنی سے ٹک ٹاک خریدنے سے متعلق ڈیل کررہے ہیں۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More