برطانیہ: مسجد میں کرونا ویکسین سینٹر قائم

سماء نیوز  |  Jan 24, 2021

Photo/AFP

برطانیہ کے مسلمانوں نے مسجد کو کرونا وائرس ویکسی نیشن سینٹر میں تبدیل کردیا۔ مسجد کے امام اور رضاکاروں کا کہنا ہے کہ وبا کے خلاف اپنا کردار ادا کرنے پر انہیں فخر ہے۔

برمنگھم میں العباس اسلامک سنٹر برطانیہ کی پہلی مسجد ہے جس نے کرونا وائرس کی ویکسین لگوانے کیلئے جگہ فراہم کی ہے۔ اس مسجد کے احاطے میں برطانیہ کے نیشنل ہیلتھ سروس (این ایچ ایس) اور مقامی فارمیسی نے ویکسی نیشن سینٹر بنادیا ہے۔

مسجد کے امام شیخ نورو محمد نے میڈیا کو بتایا کہ وہ اور ان کی مسجد کی انتظامیہ برطانیہ کی ویکسی نیشن مہم میں حصہ لیتے ہوئے فخر محسوس کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے لیے یہ خوشی کا مقام ہے کہ حکومت نے وبا کے خلاف ہمیں کردار ادا کرنے کا موقع دیا ہے۔

مسجد انتظامیہ نے ویکسی نیشن سینٹر کیلئے دو بڑے ہال اور کچھ اور جگہ مختص کی ہے۔ ایک ہال میں 500 سے زیادہ افراد کی گنجائش ہے۔ ایک ہال میں آنے والوں کا چیک اپ اور رجسٹریشن ہوتی ہے اور دوسرے ہال میں ان کو ٹیکہ لگایا جاتا ہے۔

برطانیہ کی مسلم کمیونٹی میں کووڈ ویکسین کے بارے میں درست معلومات فراہم کرنے کی خاطر ملک بھر کی مساجد کے امام فعال ہو گئے ہیں۔ بالخصوص جمعہ نماز کے خطبوں میں اس ویکسین سے جڑی غلط فہمیاں دور کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

برطانیہ کی تقریباﹰ تمام مساجد میں جمعہ نماز کے خطبوں میں مسلم کمیونٹی کو بتایا جا رہا ہے کہ کووڈ 19 کی ویکسین محفوظ ہے اور اسلامی تعلیمات کے مطابق اسے لگوانے میں کوئی مضائقہ نہیں ہے۔

مساجد اور اماموں کی قومی تنظیم ایم آئی این اے بی کے چیئرمین قاری قاسم نے خبر رساں ادارے اے ایف پی کو بتایا کہ ایک خصوصی مہم کے تحت ملک بھر کے مسلمانوں میں کووڈ ویکسین کے بارے میں درست معلومات پھیلانے کا انتظام کیا گیا ہے۔

Photo/AFP

برطانوی حکومت نے اکسفورڈ ایسٹرا زنییکا اور فائزر کی ویکسین کو محفوظ قرار دیتے ہوئے انہیں عوامی استعمال کے لیے منظور کر لیا ہے۔ قاری قاسم کے مطابق مسلم کمیونٹی میں اگر اس حوالے سے کوئی ہچکچاہٹ ہے تو اس کی وجہ لاعلمی اور غلط خبروں کا پھیلایا جانا ہے۔

برطانیہ اس عالمی وبا کی وجہ سے یورپ میں سب سے زیادہ متاثر ہوا ہے۔ جہاں پچانوے ہزار افراد ہلاک بھی ہو چکے ہیں۔ تاہم ایک حکومتی تحقیق مطابق تارکین وطن اور بعض نسلی گروہوں میں کووڈ ویکسین کے بارے میں خدشات پائے جاتے ہیں۔

اس مطالعے کے مطابق برطانیہ میں رہائش پذیر تارکین وطن پس منظر کے حامل 72 فیصد افراد ویکسین لگوانے کے حق میں نہیں یا وہ اس بارے میں شک کا شکار ہیں۔ ان میں سے 42 فیصد کا تعلق پاکستان اور بنگلہ دیش سے ہے۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More