پہلا ٹیسٹ میچ، ترمیم شدہ ٹریفک پلان جاری

بول نیوز  |  Jan 24, 2021

کراچی: ٹریفک پولیس نے نیشنل اسٹیڈیم کراچی میں پاکستان اور جنوبی افریقہ کے مابین ہونے والے ٹیسٹ میچ کے پیش نظر ترمیم شدہ ٹریفک پلان جاری کردیا

تفصیلات کے مطابق پاکستان اور جنوبی افریقا کے درمیان ٹیسٹ میچ کے پانچوں دنوں نیشنل اسٹیڈیم کی طرف جانے والی بیشتر مرکزی شاہراہیں چھوٹی گاڑیوں کیلئے کھلی رکھنے کا اعلان کیا گیا ہے۔

گزشتہ روز ٹریفک پولیس کراچی کی جانب سے خصوصی ٹریفک پلان جاری کیا گیا تھا جس میں ترمیم کی گئی ہے۔

جاری ہونے والے حالیہ اعلامیے میں کہا گیا کہ ٹیسٹ میچ 26 جنوری سے 30 جنوری تک نیشنل اسٹیڈیم کراچی میں منعقد ہوگا اور اس سلسلے میں خصوصی ترمیم شدہ ٹریفک پلان مرتب کیا گیا ہے۔

بند روڈ اور متبادل راستے

لیاقت آباد سے براستہ حسن اسکوائر فلائی اوور نیشنل اسٹیڈیم روڈ عام پبلک کے لیے بند رہے گی، تمام ٹریفک یونیورسٹی روڈ کا راستہ اختیار کرکے منزل کی طرف جا سکے گی۔

نیشنل اسٹیڈیم فلائی اوور بھی تمام قسم کی ٹریفک کے لیے بند رہے گا۔

کارساز سے اسٹیڈیم چھوٹی گاڑیوں کے لیے کھلا رہے گا لیکن پبلک ٹرانسپورٹ اور ہیوی گاڑیوں کو جانے کی اجازت نہیں ہوگی۔

ڈالمیا روڈ ملینیم سگنل چھوٹی گاڑیوں کے لیے کھلا رہے گا لیکن پبلک ٹرانسپورٹ اور ہیوی گاڑیوں کو جانے کی اجازت نہیں ہوگی۔

یونیورسٹی روڈ سے نیو ٹاؤن ٹرننگ اسٹیڈیم روڈ چھوٹی گاڑیوں کے لیے کھلا رہے گا جبکہ پبلک ٹرانسپورٹ اور ہیوی گاڑیوں کو جانے کی اجازت نہیں ہوگی۔

سہراب گوٹھ سے نیپا، لیاقت آباد نمبر 10 سے حسن اسکوائر، پی پی چورنگی سے یونیورسٹی روڈ، کارساز سے اسٹیڈیم، ملینیم تا نیو ٹاؤن ہر قسم کی ہیوی ٹریفک کا داخلہ ممنوع ہوگا۔

اعلامیے میں کہا گیا کہ گاڑیاں اور موٹر سائیکلوں کو کسی سروس روڈ یا میں روڈ پر کھڑی نہ کریں۔

شہریوں سے اپیل

ڈی آئی جی ٹریفک اقبال دارا نے شہریوں سے اپیل کی ہے کہ وہ زحمت اور پریشانی سے بچنے کے لیے ٹریفک پولیس اور قانون نافذ کرنے والے اداروں سے تعاون کریں۔

کراچی: پہلا ٹیسٹ میچ، نیشنل اسٹیڈیم 

پاکستان اور جنوبی افریقہ کے درمیان پہلا ٹیسٹ میچ 26 سے 30 جنوری تک کراچی کے نیشنل اسٹیڈیم میں کھیلا جائے گا جبکہ سیریز کے دوسرے ٹیسٹ میچ کی میزبانی 4 سے 8 فروری تک راولپنڈی کرے گا۔

-->
مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More