نظریہ ضرورت کو زندہ کرنا بڑا المیہ ہوگا، مریم نواز

بول نیوز  |  Feb 16, 2021

پاکستان مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے کہا ہے کہ آئین کی واضح شق کے ہوتے ہوئے نظریہ ضرورت کو زندہ کرنا ملک اور قوم کے لیے بڑا المیہ ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر بیان دیتے ہوئے مریم نواز کا کہناتھا کہ دعا اور امید ہے ایک فرد کی خواہش پر ایک جماعت کو ریلیف دینے اور حکومت کی ڈوبتی کشتی کو سہارا دینے کے لیے اداروں کی ساکھ کو داؤ پر نہیں لگایا جائے۔

دعا اور امید ہےایک فرد کی خواہش پر ایک جماعت کو ریلیف دینے اور حکومت کی ڈوبتی کشتی کو سہارا دینے کے لیے پوری عدلیہ کی ساکھ کو داوٌ پر نہیں لگایا جائے گا۔ آئین کی واضح شق کے ہوتے ہوئے نظریہ ضرورت کو زندہ کرنا ملک، قوم اور خود عدلیہ کے لیے بہت بڑا المیہ ہو گا۔

— Maryam Nawaz Sharif (@MaryamNSharif) February 16, 2021

انہوں نے کہا کہ کوئی ایسا کام نہیں کرنا چاہیے جس سے یہ تاثر جائے کہ کسی کے ایما پر آئین سے چھیڑ چھاڑ کی جا رہی ہے۔

ECP like all institutions is bound by Article 226 of the constitution. It has categorically opined that open ballot cannot be the course for senate elections since such would need a constitutional amendment. It would be wrong to use ECP’s shoulder & lay it open to public wrath.

— Maryam Nawaz Sharif (@MaryamNSharif) February 16, 2021

مریم نواز نے سوال کیا کہ جو آئین میں واضح لکھا ہے اس پر الیکشن کمیشن کیسے دوبارہ غور کرسکتا ہے۔ اگر کسی چیز کے لیے آئینی ترمیم کی ضرورت ہے تو پھر اس کے لیے کوئی دوسرا راستہ نہیں۔

-->
مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More