کورونا وائرس: پاکستان میں مزید5ہزارسےزائدکیسز اور102 اموات رپورٹ

ہم نیوز  |  Apr 08, 2021

عالمی وبا کورونا وائرس کے سبب پاکستان میں مزید102اموات اور5ہزار329نئے کیسز سامنے آئے ہیں۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے مطابق پاکستان میں کورونا سے اموات کی مجموعی تعداد15 ہزار124تک پہنچ گئی جبکہ متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد7 لاکھ5 ہزار229 ہوگئی ہے۔

ملک بھرمیں ایکٹو کیسز کی تعداد66ہزار994ہےاور6لاکھ 23ہزار399افراد کورونا سے صحتیاب ہوچکے ہیں۔

کورونا کے سبب سب سے زیادہ اموات پنجاب میں ہوئی ہیں جہاں 6 ہزار793 افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں جبکہ سندھ میں 4 ہزار520، خیبر پختونخوا 2 ہزار519، اسلام آباد 591، گلگت بلتستان 103، بلوچستان میں 212 اور آزاد کشمیر میں 386 افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: 

اسلام آباد میں کورونا کیسزکی تعداد63ہزار499، خیبرپختونخوا94ہزار880، پنجاب 2 لاکھ 40 ہزار584، سندھ 2 لاکھ 67 ہزار612، بلوچستان 19 ہزار999، آزاد کشمیر 13 ہزار873اور گلگت بلتستان میں 5 ہزار10افراد کورونا سے متاثر ہوچکے ہیں۔

کوروناوائرس پاکستان میں تیزی سے پھیل رہا ہے۔ نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کی جانب سے پاکستان کے 26 اضلاع ہائی رسک قرار دیئے گئے ہیں۔

لاہور، فیصل آباد، گوجرانوالہ، بہاولپور، منڈی بہاؤالدین، ملتان، اوکاڑہ،  رحیم یار خان، راولپنڈی، گجرات، شیخوپورہ، سرگودھا، سیالکوٹ، ٹوبہ ٹیک سنگھ متاثر، مظفر آباد، میر پور، کوٹلی، پشاور، سوات، نوشہرہ ، دیر لوئر، مالاکنڈ، صوابی، چارسدہ اور ہری پور ہائی رسک اضلاع میں شامل ہیں۔

پاکستان میں کورونا کی ویکسینیشن جاری ہے اور دوسرے مرحلے میں 60 سال سے بڑی عمر کے افراد کو ویکسین لگائی جا رہی ہے۔

یہ بھی پڑھیں: 

ملک بھر میں ایڈلٹ ویکسینیشن مراکز قائم کیے جا چکے ہیں اور ویکسینیشن کا تمام تر عمل ڈیجیٹل میکنزم سے کنٹرول کیا جائے گا۔

ویکسینیشن کے لیے پنجاب میں 189 اور سندھ میں 14 مراکز قائم کیے گئے ہیں جبکہ خیبر پختونخوا میں 280، بلوچستان میں 44 اور اسلام آباد میں 14 ویکسینیشن سینٹر قائم کیے جا چکے ہیں۔ آزاد کشمیر میں 25 اور گلگت بلتستان میں بھی 16 مراکز کے ذریعے ویکسینیشن کی جائے گی۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More