میرا جی آپ کیلئے’لپ اسٹک اورکپڑے’ لارہی ہیں

سماء نیوز  |  Apr 16, 2021

اداکارہ میرا کا دورہ امریکا بےمقصد نہیں، وہ جلد ” میرا جی لپ اسٹک ” اور اپنی کپڑوں کی برانڈ کا آغاز کرنے جارہی ہیں ۔ میرا کا کہنا ہے کہ وہ ”پاگل نہیں ہیں ”۔

امریکی ریاست ٹیکساس کے شہرہیوسٹن میں موجود میرا نے انسٹاگرام پوسٹ میں بتایا کہ وہ جلد ریحان صدیقی کے ساتھ مل کرامریکا میں اپنے کاروبارکا آغاز کریں گی۔

اداکارہ نے اپنی پوسٹ میں لکھا ” ریحان صدیقی پاکستان کا حقیقی چہرہ اورحقیقی ٹائیگر ہیں جو بین الاقوامی طورپر پاکستان کا تشخص اجاگرکررہے ہیں۔

میرا نےاپنے فالوورز کو مزید بتایا ” میں اور ریحان ایک مختصر فلم پر کام کررہے ہیں جو امریکا میں ہی بنائی جائے گی، میں اپنی کپڑوں کی برانڈ اور لپ اسٹک برانڈ ” میرا جی لپ اسٹک ” متعارف کرواوں گی ”۔

اداکارہ کےمطابق ” ہم امن اور سماجی بہبود پرکام کررہے ہیں ”۔

میرا نے بتایا کہ وہ ریحان صدیقی کی دعوت پر ہیوسٹن آئی تھیں جبکہ پاکستان قونصل خانہ نے بھی انہیں مدعو کیا۔ میرا اور ریحان صدیقی مستقبل قریب میں کئی پروجیکٹس پرساتھ کام کریں گے۔

خود پراعتماد کرنے کیلئے ریحان صدیقی کا شکریہ ادا کرنے والی میرانے فالوورزکو یہ بھی بتایا کہ وہ جلد اپنی ویب سائٹ اور یوٹیوب چینل بھی لانچ کریں گی۔

دو انسٹا پوسٹ میں امریکا میں اپنی مصروفیات کاتفصیلی ذکر کرنے والی میرا نےاختتام پرلکھا ” میں پاگل نہیں ہوں”۔

اداکارہ کے مداحوں نے انہیں سراہتے ہوئے اپنے تبصروں میں میرا کیلئے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔

چند روز قبل سوشل ميڈيا پراطلاعات سامنے آئیں تھیں کہ میرا چیک اپ کے لیے اسپتال گئیں جہاں انہوں نے پروٹوکول اور اپنی شہرت کے حوالے سے ڈاکٹر کو بتایا، اس حوالے سے کچھ ديرکی بحث کے بعد ڈاکٹر نے اداکارہ کی ذہنی حالت کے حوالے سے مشکوک ہوتے ہوئے مینٹل ہیلتھ والوں کو اطلاع دی۔

بعد ازاں امریکا میں مینٹل اسپتال میں داخلے کی خبروں کے حوالے سے اپنا ردعمل ظاہر کرتے ہوئے میرا نے انسٹا پوسٹ میں لکھا تھا” آپ کتنے ہی پڑھے لکھے، باصلاحیت، امیر کیوں نہ ہوں لیکن آپ کا دوسروں سے کیا جانے والا سلوک آپ کے بارے میں سب بیان کردیتا ہے”۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More