چینی خلائی راکٹ ’لانگ مارچ‘ کے ٹکڑے بحر ہند میں گر گئے

ڈی ڈبلیو اردو  |  May 09, 2021

یہ راکٹ آج تک خلا میں بھیجا جانے والا سب سے بڑا چینی راکٹ تھا

بیجنگ سے موصولہ رپورٹوں کے مطابق اس خلائی راکٹ کے ٹکڑے بحر ہند میں گرنے کی چینی خلائی ادارے کے ماہرین نے بھی تصدیق کر دی ہے۔ 'لانگ مارچ فائیو بی‘ نامی یہ راکٹ آج تک خلا میں بھیجا جانے والا سب سے بڑا چینی راکٹ تھا، جو اپریل کے اواخر میں اٹھارہ ٹن وزنی ماڈیول 'تیان ہے‘ کو لے کر خلائی سفر پر روانہ ہوا تھا۔

چینی راکٹ کی بے قابو واپسی، کیا ہو گا کچھ خبر نہیں

چین کے سرکاری نشریاتی ادارے سی سی ٹی وی نے بتایا کہ خلا سے انتہائی تیز رفتاری سے زمین کے کرہ ہوائی میں داخلے کے وقت اس راکٹ کے زیادہ تر حصے جل گئے تھے۔

خلائی راکٹ کا ملبہ کسی رہائشی علاقے میں گرنے کے خدشات

زمین کے کرہ ہوائی میں داخلے کے بعد اس راکٹ کے بچے کھچے حصے آج اتوار نو مئی کے روز بحر ہند میں مالدیپ کے مجموعہ جزائر سے مغرب کی طرف کھلے سمندر میں گرے۔ اس طرح کئی دنوں سے جاری یہ قیاس آرائیاں اور خدشات بھی ختم ہو گئے کہ اس خلائی راکٹ کا ملبہ زمین پر کسی ملک کے رہائشی علاقے میں بھی گر سکتا تھا۔

علیحدہ خلائی اسٹیشن کی تعمیر، چین نے تاریخی قدم اٹھا لیا

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More