فرانسیسی صدر کو تھپڑ مارنے والے شخص کی سزا کا اعلان کر دیا گیا

بول نیوز  |  Jun 11, 2021

کیا آپ جانتے ہیں کہ فرانسیسی صدر ایمانوئیل میکرون کو تھپڑ مارنے والے شخص کو کیا سزا دی گئی ہے؟

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق فرانسیسی صدر ایمانوئیل میکرون کو تھپڑ مارنے والے شخص کو چار ماہ قید کی سزا سنائی گئی ہے۔

تھپڑ مارنے والے شخص نے عدالت میں بتایا کہ اس نے فرانسیسی صدر ایمانوئیل میکرون کو اس لیے تھپڑ مارا تھا کیوں کہ وہ میکرون کی صدارت سے مایوس ہوچکا ہے۔

A man slapped French President Emmanuel Macron in the face and shouted ‘Down with Macronia' at a meet-and-greet in southern France https://t.co/kYTSA9wp8p pic.twitter.com/pKJhpUIoy5

— Reuters (@Reuters) June 8, 2021

عدالت میں بیان دیتے ہوئے تھپڑ مارنے والے شخص نے مزید کہا کہ پبلک مقام پر صدر ایمانوئیل کا نظر آنا مجھے ناگوار گزرا جس کی وجہ سے میں نے صدر کو تھپڑ مارا۔

گزشتہ دنوں پیرس متنازع بیانات کے باعث شہرت رکھنے والے فرانسیسی صدر ایمانوئیل میکرون کے منہ پر ویلانس شہر میں ایک نوجوان نے زوردار تھپڑ مار دیا تھا۔

واقع کے فوری بعد  پولیس اور سیکورٹی اداروں نے فوری طور پر2افراد کو حراست میں لیا تھا۔

 جس میں ایک تھپڑ مارنے والا شخص تھا جبکہ دوسرا مشتبہ شخص واقعے کی ویڈیو بنارہا تھا اور مبینہ طور پر تھپڑ مارنے والے شخص کا ساتھی تھا۔

تفتیشی ذرائع نے دعویٰ کیا ہے کہ تھپڑ مارنے والا شخص 28 سالہ ڈامین تاریل ہے جو قرون وسطی کے دور کی تلوار بازی کا مداح ہے اور اس حوالے سے ایک کلب بھی چلاتا ہے۔

اس حوالے سے پولیس کا کہنا ہے کہ تلوار چلانے کی تربیت دینے والے کلب کے مالک ڈامین تاریل کا مجرمانہ ریکارڈ موجود نہیں ہے۔

پولیس نے بتایا کہ ڈامین نے تھپڑ رسید کرتے ہوئے میکرون کی پالیسیوں کے خلاف نعرے بازی کی تھی۔

واضح رہے کہ فرانس کے صدر ایمانوئیل میکرون وبا کے بعد سماجی اور تجارتی سرگرمیوں کی بحالی کا جائزہ لینے ریسٹورینٹس کے مالکان اور طلبا سے ملاقات کے لیے شہر ڈروم پہنچے تھے۔

--> Double Click 300 x 250
مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More