چینی انجینیرز پر حملے میں نئےاسلحہ کے استعمال کا انکشاف

سماء نیوز  |  Aug 01, 2021

کراچی: جائے وقوعہ کا ایک منظر

پولیس کی جانب سے انکشاف کرتے ہوئے بتایا گیا ہے کہ کراچی میں چینی انجینیرز پر حملے میں نیا پستول استعمال کیا گیا تھا۔

سما ڈیجیٹل سے گفتگو میں ایس ایس پی کیماڑی فدا حسین کا کہنا تھا کہ ابتدا میں چینی شہری حملے کے جائے وقوعہ سے متعلق بتانے سے قاصر تھے، تاہم بعد ازاں انہوں نے حملے کی جگہ کا تعین کیا، جس سے تحقیقات میں مدد ملی۔

جائے وقوعہ کی نشاندہی کے بعد جب تحقیقات آگے بڑھیں تو مذکورہ مقام سے گولیوں کے 3 خول برآمد کیے گئے، جو 9 ایم ایم پستول کے ہیں۔

پولیس کی جانب سے گولیوں کے خول کو فرانزک کیلئے بھجوایا گیا تھا کہ اس بات کی جانچ کی جاسکے کہ آیا یہ پستول پہلے کسی واردات میں استعمال ہوا ہے یا نہیں۔ جس کے بعد فرانزک رپورٹ میں اس بات کا انکشاف ہوا کہ چینی انجینیرز پر حملے میں نیا پستول استعمال کیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ کراچی کے علاقے گلبائی فلائی اوور کے قریب بروز جمعرات  29 جولائی کی صبح چینی شہریوں پر اس وقت حملہ کیا گیا، جب وہ اپنی سفید رنگ کی گاڑی میں ڈیفنس سے سائٹ ایریا کی جانب رواں دواں تھے۔ پولیس کی ابتدائی تفتیش کے مطابق حملہ آور موٹر سائیکل پر سوار تھے، جن کی تعداد 2 تھی۔

فائرنگ سے زخمی ہونے والے چینی انجینیر کو فوری طبی امداد کیلئے اسپتال منتقل کیا گیا، جہاں اس کی شناخت یون شینگ فنگ کے نام سے کی گئی تھی۔ حملے میں گاڑی میں موجود دوسرا چینی شہری اور ڈرائیور محفوظ رہے تھے۔

پولیس کے مطابق چینی انجینیر 7 جولائی کو کراچی پہنچے۔ دونوں شہریوں کو سائٹ کے علاقے میں ٹیکسٹائل مل کے دورے پر جانا تھا۔ چینی شہریوں نے کراچی آمد سے متعلق پولیس کو آگاہ نہیں کیا تھا، جب کہ ان کی رہائش اور سفر کیلئے بھی کوئی سیکیورٹی موجود نہ تھی۔

چینی انجینیر پر حملے کی ذمہ داری کالعدم قوم پرست تنظیم نے قبو ل کی تھی۔

واقعہ سے متعلق چینی وزارت داخلہ نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ وہ حملے کا بغور جائزہ لے رہے ہیں۔ حملے سے متعلق ایس ایس پی کیماڑی نے میڈیا کو بتایا کہ حملے کی سی سی ٹی وی ویڈیو حاصل کرلی گئی ہے، جو ماڑی پور روڈ پر لگے کیمروں میں محفوظ تھی۔ جس میں موٹر سائیکل سواروں کو سفید رنگ کی گاڑی کے تعاقب میں دیکھا جا سکتا ہے۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More