نصیر الدین شاہ نے مودی حکومت کو کھری کھری سنادی

سماء نیوز  |  Sep 14, 2021

بالی ووڈ اداکار نصیر الدین شاہ نے بھارتی حکومت کو پروپیگنڈا فلمیں بنوانے پر آڑے ہاتھوں لے لیا ہے۔

کو دیے گئے اپنے ایک انٹرویو میں اداکار نصیر الدین شاہ نے کہا ہے کہ بھارتی حکومت بالی وڈ کے بڑے فلم سازوں اور ہدایت کاروں کو اپنے حق میں فلمیں بنانے کے لیے ان کی حوصلہ افزائی کرتی ہے، فلم سازوں سے کہا جاتا ہے کہ وہ حکومت کی کاوشوں کو فلموں کے ذریعے اجاگر کریں۔

نصیر الدین شاہ نے کہا کہ حکومت پروپیگنڈا فلمیں بنانے کے لیے مالی معاونت بھی کرتی ہے، ایسا نازیوں کے دوران میں کیا جاتا تھا، نازی فلسفے کی تشہیر کے لیے فلمیں بنوائی جاتی تھیں۔

سلمان خان، شاہ رخ خان اور عامر خان کے طالبان کے افغانستان میں واپسی کے بعد بھارت میں پیدا ہونے والے موجودہ معاملات پر خاموشی اختیار کرنے کے حوالے سے سوال کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اگرچہ وہ ان کے لیے نہیں بول سکتے لیکن وہ اندازہ لگا سکتے ہیں کہ انہیں کس حد تک ہراساں کیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ وہ تینوں ہراساں ہونے کی وجہ سے پریشان ہیں، ان کے پاس بولنے کے بعد کھونے کے لیے بہت کچھ ہے، یہ صرف مالی ہراسانی نہیں ہوگی۔

اداکار نے کہا کہ میرا نہیں خیال کہ اس وقت بالی ووڈ میں مسلمانوں کے ساتھ امتیازی سلوک کیا جا رہا ہے، میں سمجھتا ہوں کہ انڈسٹری میں ہماری شراکت داری ایک اہم چیز ہے، انڈسٹری میں آپ جتنی دولت حاصل کرسکتے ہیں اتنی عزت بھی کما سکتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ فلمی کیئریئر شروع کرتے ہوئے مجھے اپنا نام تبدیل کرنے کے لیے مشورے ملتے رہے لیکن میں نے نہیں کیا، مجھے نہیں لگتا کہ میرے نام سے میرے کیئریئر پر کوئی فرق پڑا ہو۔

واضح رہے کہ نصیر الدین شاہ تقریبا پانچ دہائیوں سے بھارتی فلم انڈسٹری کا حصہ رہے ہیں اور کچھ عظیم فلمیں ان کے کریڈٹ میں ہیں۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More