انکم ٹیکس گوشوارے جمع کرانے کی مقررہ مدت ختم

سماء نیوز  |  Oct 16, 2021

فائل فوٹو

ایف بی آر کی جانب سے دی گئی انکم ٹیکس گوشوارے جمع کرانے کی مدت جمعہ 15اکتوبر کو ختم ہوگئی۔

ایف بی آر کے مطابق ساڑھے تین ماہ کی مدت میں 26لاکھ افراد نے انکم ٹیکس گوشوارے جمع کروائے جو کہ گزشتہ سال کے مقابلے ٹیکس گوشواروں کی تعداد میں 45فیصد اضافہ ہوا ہے۔ 15 اکتوبر تک گوشواروں کے ساتھ 48.6 ارب روپے ٹیکس بھی جمع کروایا گیا جبکہ گزشتہ سال 8 دسمبر تک 18 لاکھ ٹیکس گوشوارے جمع ہوئے اور گوشوارں کے ساتھ 29.6 ارب روپے کا ٹیکس جمع ہوا تھا۔

ایف بی آر نے کہا کہ گزشتہ سال اکتوبر تک ریٹرنز کے ساتھ 9.8ارب روپے ٹیکس اکٹھا ہوا، سال 2020 میں مجموعی طور پر 30لاکھ گوشوارے اور 54.7 ارب ٹیکس اکٹھا ہوا۔

رواں سال 24 لاکھ 87 ہزار 519 افراد نے گوشوارے بھرے، 15 اکتوبر تک 65 ہزار 463 ایسوسی ایشن آف پرسنز نے ریٹرنز فائل کیے، اسی دوران 9 ہزار240 کمپنیوں نے بھی ریٹرنز فائل کیے۔

نان فائلرز کو کیا جرمانہ ہوسکتا ہے؟

ایف بی آر نے کہا کہ نان فائلرز کو یومیہ 1 ہزار جرمانہ اور 2 سال قید کی سزا ہوسکتی ہے اور گھر، گاڑی، اسمارٹ فون کی خریداری بہت مہنگی پڑے گی۔اس کےعلاوہ بجلی کے بل، اشیاء کی خرید و فروخت، منافع، انعامی رقم پر دُگنا ٹیکس دینا ہوگا اور گاڑیوں کی رجسٹریشن پر بھی دُگنا ٹیکس ادا کرنا ہوگا۔

ٹیکس نہ جمع کروانے والوں کو 5کروڑ کی پراپرٹی پر 5 لاکھ کے بجائے 10 لاکھ روپے ٹیکس کٹوتی ہوگی، 1000 سی سی کی گاڑی کی رجسٹریشن پر 15 ہزار کی بجائے 30 ہزار دینے ہونگے،1 ہزار سی سی تک کی گاڑی کا ٹوکن ٹیکس 10 ہزار کے بجائے 20 ہزار روپے ہوگا۔

ایف بی آر کے مطابق 500 ڈالر مالیت کے موبائل کی رجسٹریشن پر 3 ہزار کی بجائے 6 ہزار کا ٹیکس دینا ہوگا جبکہ 500 ڈالر سے مہنگے اسمارٹ فون پر 5 ہزار 200 کی بجائے 10 ہزار 400 روپے کا ٹیکس لاگو ہوگا۔

نان ٹیکس فائلرز کو 25 ہزار روپے کے ماہانہ بجلی کے بل پر ساڑھے 7 فیصد اضافی ٹیکس دینا ہوگا اور اشیاء کی خریداری،امپورٹ، انعامی رقم اور منافع پر بھی اضافی ٹیکس دینا ہوگا۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More