مسجد الحرام میں تقریباً 2برس بعد سماجی فاصلےنشانات ہٹادیےگئے

سماء نیوز  |  Oct 17, 2021

مسجد حرام میں آج اتوار کے روز نماز فجر کے موقع پر روح پرور منظر دیکھنے میں آیا۔ 2 برس کے بعد سعودی حکومت نے حرم مکی میں سماجی فاصلے کے نشانات کو ہٹادیا۔

گزشتہ سال عالمی وبا کرونا وائرس کے باعث سماجی فاصلے کی پابندی کی وجہ سے حفاظتی تدابیر اور احتیاطی اقدامات کے سلسلے میں کرونا ایس او پیز کے تحت نشانات لگائے گئے تھے جبکہ محدود تعداد میں نمازیوں شرکت کی اجازت دی گئی تھی۔

گزشتہ دنوں سعودی وزارت داخلہ کی جانب سے ایس او پیز میں نرمی کی منظوری دی گئی تھی۔ اس نرمی میں مسجد حرام میں کارکنان اور زائرین کی مکمل حاضری کا اجازت دی گئی ہے تاہم تمام لوگوں کو مستقل طور پر ماسک لگانا لازم ہوگا۔

علاوہ ازیں “اعتمرنا” یا “توكلنا” موبائل ایپلی کیشن کے ذریعے عمرے اور نماز کے لیے وقت کے تعین کا سلسلہ جاری رہے گا۔

آج اتوار کو نماز فجر میں تقریبا دو سال بعد امام حرم شیخ بندر بلیلہ کی آواز میں نمازیوں کو صفیں درست کرنے کےلیے مخصوص جملے “استووا.. اعتدلوا.. تراصوا.. سدوا الخلل” سنائی دیے گئے۔

نماز فجر کی وڈیو پوری دنیا میں سوشل میڈیا پر وسیع میڈیا پر وائرل ہوچکی ہے۔

اس سے قبل صدرات عامہ برائے امور حرمین شریفین کی ہدایت پر مسجد الحرام کو مکمل طور پر نمازیوں کے لیے کھولے جانے کے بعد حرم شریف میں سماجی فاصلے کی ہدایات کے لیے جگہ جگہ لگائے گئے بورڈ اور اسٹیکرز ہٹادیے گئے ہیں۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More