جشنِِ میلاد النبی ﷺ : ابرار الحق نے اپنی نعت جاری کردی

بول نیوز  |  Oct 19, 2021

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رہنما ، ہلال احمر کے چیئرمین اور نامور گلوکار ابرار الحق نے جشنِ میلاد النبی ﷺ کی مناسبت سے اپنی نعت جاری کردی ہے۔

تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی رہنما اور گلوکار ابرار الحق نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر کی گئی پوسٹ میں اپنے مداحوں کو عیدِ میلادالنبی ﷺ کے موقع پر نعت جاری کرنے سے متعلق بتا تے ہوئے اس نعت کو ‘ہمارے نبی ﷺ کے لیے ایک تحفہ’ قرار دیا ہے۔

A small gift for Our Prophet (PBUH)

Naat: Ho edhr bi Nazar e Karam Ya RasulAllah

Recited by: Abrar ul haq ,Peer Maaz abdul ghafoor, Rizwan Sultani

Video Production: https://t.co/h66BHyo1eF, AdnanEdited by: Rizwanhttps://t.co/fAMn4P9mcy

— Abrar Ul Haq (@AbrarUlHaqPK) October 18, 2021

ابرار الحق کی نعت ‘ہو ادھر بھی نظر کرم یارسول اللہ ﷺ‘ میں پیر معاذ عبدالغفور اور رضوان سلطانی کی آواز بھی شامل ہے۔

پی ٹی آئی رہنما اور گلوکار ابرار الحق نے اپنی نعت ’ہو ادھر بھی نظرِ کرم یا رسول اللّٰہ ﷺ‘ اپنے یوٹیوب چینل پر بھی جاری کی ہے۔

ان کی اس نعت کو سوشل میڈیا صارفین کی جانب سے بہت زیادہ پسند بھی کیا جارہا ہے

واضح رہےکہ ملک بھر میں جشنِ ولادت رسول ﷺ شایان شان طریقے سے مذہبی عقیدت واحترام کے ساتھ منائی جارہی ہے۔

پاکستان سمیت دنیا بھر میں عید میلادالنبی کے حوالے سے خصوصی تقریبات، کانفرنسز اور میلاد ریلیوں کا انعقاد کیا جارہا ہے۔

12 ربیع الاول کے دن کا آغاز وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں 31 توپوں کی سلامی سے ہوا ،پھر مساجد میں نماز فجر کے بعد ملکی سلامتی واستحکام کےلیےخصوصی دعائیں بھی کی گئی۔

وزیر اعظم عمران خان نے مذہبی امورکی وزارت کو ملک بھر میں جشن عیدمیلاد النبی صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم شایان شان طریقے سے منانے کی ہدایت کی ہے۔

ہم اپنے رسول مکرم ﷺ کا یومِ ولادت یعنی ”عیدمیلاد النبی ﷺ“ نہایت شایانِ شان طریقے سے ملک بھر میں منائیں گے۔صبح صدرِمملکت ایک تقریب کی میزبانی کریں گے جبکہ مجھے سہ پہر میں کنونشن سنٹر میں یہ بابرکت دن منانے کا شرف حاصل ہوگا، انشاءاللہ! pic.twitter.com/xstPtfQZUl

— Imran Khan (@ImranKhanPTI) October 18, 2021

ملک بھر میں گلیوں،بازاروں اور مساجد سمیت تمام سرکاری و نجی عمارتوں کو برقی قمقموں اور رنگ برنگی جھنڈیوں سے سجایا گیا ہے۔

 

Adsence 300X250
مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More