نالہ متاثرین کی بحالی،سپریم کورٹ نے وزیراعلیٰ سندھ کی رپورٹ مسترد کردی

سماء نیوز  |  Oct 27, 2021

فوٹو: آن لائن

سپریم کورٹ کراچی رجسٹری نے تجاوزات کیس کا تحریری حکم نامہ جاری کرتےہوئے نالہ متاثرین کی بحالی سے متعلق وزیراعلیٰ سندھ کی رپورٹ مسترد کردی ہے۔

سپریم کورٹ نے تجاوزات کیس کے تحریری فیصلے میں کہا ہے کہ عدالت بار بار واضح کرچکی ہے کہ بحریہ ٹاؤن فنڈز کا فیصلہ عملدرآمد بینچ ہی کرے گا۔ وزیراعلیٰ سندھ  نے عدالت کو بتایا کہ صوبائی کابینہ نے متاثرین کی بحالی کے لیے رقم کی منظوری دی ہے۔

وزیراعلیٰ سندھ نے نالہ متاثرین کو2 سال میں بحالی کی یقین دہانی کروائی ہے۔ سپریم کورٹ نے وزیراعلیٰ سندھ  کو اپنے بیان پرعمل درآمد کرانے کی ہدایت کی۔ نالہ متاثرین کو انفراسٹرکچر پانی، بجلی، گیس سمیت تمام سہولیات فراہم کرنے کی ہدایت بھی کی گئی ہے۔

سپریم کورٹ نے تحریری حکم نامہ میں کہا ہے کہ کے ڈی اے، کے ایم سی، ایس بی سی اے جیسے ادارے ناکارہ ہوچکے ہیں اور شہر کو چلانے والے اداروں کا حال بدتر ہوچکا ہے۔

سپریم کورٹ نے کہا کہ افسران کی تیزی سے ٹرانسفر اور پوسٹنگ سے بھی معاملات خراب ہورہے ہیں۔ وزیراعلیٰ سندھ نے بتایا کہ افسران کی کمی کی وجہ سے اضافی چارج اور تبادلہ کرنا پڑتا ہے،صوبے میں گریڈ سے 17 سے 21 تک کے افسران کی شدید کمی ہے اور وفاق افسران کی کمی پورے کرنے کے لیے تعاون نہیں کررہا ہے۔ سپریم کورٹ نے اٹارنی جنرل کومعاملات حل کرنے کی ہدایت کی ہے۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More