فرانس میں کورونا وبا کے باعث نئی پابندیاں عائد

بول نیوز  |  Dec 07, 2021

فرانس میں کورونا کی وبا کے پیش نظر 4 ہفتوں کے لیے نئی پابندیاں لگادی گئی ہیں۔

فرانس میں کورونا کی وبا نے ایک مرتبہ پھر سر اٹھا لیا ہے، اسپتالوں میں مریضوں کے لئے جگہ کم پڑنے کے بعد ایمرجنسی نافذ ہے۔ صورت حال کے پیش نظر فرانسیسی وزیر اعظم جین کاسٹیکس نے کابینہ اجلاس کے بعد اپنے ٹیلی وژن خطاب میں 4 ہفتوں کے لئے نئی پابندیوں کا اعلان کردیا ہے۔

نئی پابندیوں کے تحت ملک کے تمام نائٹ کلب 4 ہفتوں کے لیے بند کردیئے گئے ہیں تاہم ریسٹورنٹس پر گنجائش کی کوئی پابندی نہیں ہوگی۔

ملک میں کورونا وبا کے پیش نظر لوگوں کے گھروں سے کام کرنے کو سراہا جائے گا مگر انہیں کسی بھی لحاظ سے پابند نہیں کیا جائے گا۔ باہر نکلتے وقت شہری ماسک پہننے اور سماجی فاصلے کی پابندی کو یقینی بنائیں گے۔

فرانسیسی وزیر اعظم نے کہا کہ ملک کی موجودہ صورت حال ہماری انفرادی اور اجتماعی کوششوں کا متقاضی ہے، اب لاک ڈاؤن کا وقت نہیں رہا۔

جین کاسٹیکس نے کہا کہ اگر فرانسیسی وزارت صحت نے اجازت دی تو ملک میں 5 سے 12 سال کے بچوں کو بھی کورونا ویکسین لگائی جائے گی تاہم 65 سال سے زیادہ عمر کے افراد بغیر اپوائنٹ منٹ بوسٹر شاٹ لگواسکتے ہیں۔

واضح رہے کہ یورپ کے کئی ملک اس وقت کورونا کی لپیٹ میں ہیں، کورونا کی اومی کرون قسم منظر عام پر آنے کے بعد کئی ملکوں نے نئی سفری پابندیاں لگادی ہیں۔

Square Adsence 300X250
مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More