ترکی، پائپ لائن کی بندش سے تیل کی قیمتیں 7 سال کی بلند ترین سطح پر

بول نیوز  |  Jan 20, 2022

عراق سے ترکی تک تیل پہنچانے والی پائپ لائن بند ہونے کی وجہ سے آج بھی تیل کی قیمت میں مسلسل اضافہ دیکھا گیا ہے۔

ترک حکام نے بتایا ہے کہ گزشتہ روز دھاکے کے بعد لگنے والی آگ پر قابو پا لیا گیا ہے جس نے کرکوک سیہان پائن لائن کو کاٹ دیا تھا۔ ترک حکام نے متاثرہ پائپ لائن کو بحال کرنے کا دعویٰ کیا ہے تاہم ابھی تک دھماکے کی وجہ معلوم نہیں ہو سکی ہے۔

یہ نقصان ایسے وقت پر ہوا ہے جب ماہرین 2022ء میں اومیکرون کے باعث تیل کی سپلائی میں کمی کا اندیشہ ظاہر کر رہے ہیں اور کچھ تیل کی قیمت 100 ڈالر تک پہنچنے کی پیش گوئی بھی کر رہے ہیں۔

آج برینٹ خام تیل کی قیمت 87 سینٹ یا ایک فیصد بڑھ کر 88.38 ڈالر فی بیرل ہوگئی جو پہلے کے مقابلے میں 1.2 فیصد زیادہ ہے۔ اسی طرح یو ایس انٹرمیڈیٹ خام تیل کی قیمت 1.03 ڈالر یا ایک فیصد بڑھ کر 86.46 ڈالر فی بیرل ہوگئی۔

عرب نیوز کے مطابق روس یوکرائن اور مشرقِ وسطیٰ میں کشیدہ حالات کے پیش نظر پہلے ہی تیل کی سپلائی میں کمی ہے۔ دنیا میں تیل پیدا کرنے والے دوسرے بڑے ملک روس اور اوپیک رکن ممالک میں تیل پیدا کرنے والے تیسرے بڑے ملک متحدہ عرب امارات کے حالات کے پیش نظر تیل کی سپلائی میں مزید کمی کے حوالے سے تشویش سامنے آئی ہے۔

اس تناؤ سے تیل کی سپلائی میں مزید کمی واقع ہو سکتی ہے کیونکہ اوپیک پلس معاہدے کے تحت اوپیک رکن ممالک کو پہلے ہی ہر ماہ روزانہ چار لاکھ بیرل تیل کی سپلائی میں مشکلات کا سامنا ہے۔

Square Adsence 300X250
مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More