عمران خان اسلام آباد میں لاکھوں کا مجمع اکٹھا نہیں کرسکتے، سعد رفیق

سماء نیوز  |  May 18, 2022

وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق کا کہنا ہے کہ عمران خان اسلام آباد میں لاکھوں کا مجمع اکٹھا نہیں کرسکتے۔

لندن میں سماء ٹی وی سے خصوصی گفتگو کے دوران خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ عمران خان عمران خان اسلام آباد میں لاکھوں کا مجمع اکٹھا نہیں کرسکتے، وہ جو دعویٰ کرتے ہیں کہ اسے 100 سے تقسیم کرلیں، ان کے پاس اسلام آباد کو گھیرنے کی طاقت نہیں لیکن وہ فساد پیدا کرنے کی کوشش ضرور کریں گے، حکومت اس سفاد کو قانون کے دائرے میں رہتے ہوئے روکے گی۔

حکومت کی آئینی مدت کی تکمیل کے حوالے سے رہنما (ن) لیگ نے کہا کہ حکومت میں شامل تمام اتحادی جماعتوں کی رائےے ہے نکہ حکومت کو اپنی آئینی مدت مکمل کرنی چاہیے۔ملک کے لئے مشکل فیصلے کرنے پڑے تو ضرور کئے جائیں گے لیکن ایسا اسی صورت میں ممکن ہے کہ مدت مکمل ہو۔ ایک دو روز میں اس حوالے سے راستہ نکل آئے گا۔

شیخ رشید کی جانب سے راولپنڈی میں وزارت عظمیٰ کے انٹرویوز کے بیان پر وزیر ریلوے نے کہا کہ شیخ رشید ایک غیر سنجیدہ انسان ہیں۔

معاشی صورت حال اور بے قابو ڈالر کے حوالے سے سعد رفیق نے کہا کہ وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل اس وقت قطر میں آئی ایم ایف سے مذاکرات کررہے ہیں۔ ہماری معاشی ٹیم مل کر کام کررہی ہے، اسحاق ڈار لندن سے انہیں مشورہ دے رہے ہیں لیکن پہلے اتحادیوں کے ساتھ ناگزیر فیصلے ہوجائیں کیونکہ سٓخت فیصلوں پر عمل اور اس کے ثمرات حاصل کرنے کے لیے آئینی مدت کی تکمیل ضروری ہے۔

سعد رفیق نے کہا کہ موجودہ حالات میں سیاسی جماعتوں کو نیا عوامی مینڈیٹ لینے کی ضرروت ہے، ہم اس سے گریز نہیں کررہے۔ عمران خان کو ملنے والا مینڈیٹ جعلی تھا، ہم سے انتخابات چھینے گئے تھے۔ اب جب قانونی اور آئین کے مطابق پارلیمنٹ کے اندر سے تبدیلی ہوئی ہے، اسے اب تسلیم کرنا چاہیے۔

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ عمران خان کو اپنی اگلی باری کا انتظار کرنا چاہیے، ان کا ایجنڈا صرف فساد پھیلانا ، اداروں کو گالیاں دینا اور قبل از وقت انتخابات کرانے کا ہے، اتحادی وہی فیصلہ کریں گے جو پاکستان کے وسیع تر مفاد میں ہوگا۔

بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو ووٹ کے حق سے متعلق سعد رفیق نے کہا کہ سا لیکن یہ عمل شفاف ہونا چاہیے اور ہماری توجہ اسی پر ہے۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More