ترکی اور مصر کے شہروں میں سونامی کا خطرہ، اقوام متحدہ کی وارننگ جاری

اردو نیوز  |  Jun 23, 2022

اقوام متحدہ نے خبردار کیا ہے کہ بحیرہ روم کے نزدیک اور اس کے اردگرد شہروں کو سونامی کے خطرے کا سامنا ہے۔

عرب نیوز کے مطابق اقوام متحدہ کے ایک ذیلی ادارے کا کہنا ہے کہ اس بات کے سو فیصد مواقع ہیں کہ آئندہ 30 برس میں ان شہروں سے ایک میٹر بلند سمندری لہر ٹکرائے گی۔

مزید کہا گیا ہے کہ سطح سمندر بلند ہونے سے خطرہ بڑھ رہا ہے۔ بحر اوقیانوس اور بحر ہند کے گرد ممالک اس خطرے سے آگاہ ہیں۔

2018 میں کی گئی ایک تحقیق کے مطابق سطح سمندر کے مسلسل بلند ہونے سے سونامی کا خطرہ بڑھتا ہے، کیونکہ اس سے لہروں کو دور تک پہنچنے میں مدد ملتی ہے۔

یونیسکو کا کہنا ہے کہ مصر میں سکندریہ اور ترکی کے شہر استنبول سمیت پانچ شہروں کو خطرے کا سامنا ہے۔

یونیسکو میں سونامی کے ماہر برنارڈو الیاگا کا کہنا ہے کہ ’2004 اور 2011 کی سونامی ہمارے لیے وارننگ تھی جس میں اڑھائی لاکھ کے قریب افراد ہلاک ہوئے تھے۔‘

’ہم 2004 سے اب تک کافی کام کیا ہے اور اب ہم محفوظ ہیں، لیکن تیاری میں کچھ خلا ہے جسے ہمیں پُر کرنا ہے۔ ہمیں یقینی بنانا ہے کہ سیاح اور مقامی افراد وارننگ کو سمجھتے ہیں۔‘

استنبول، سکندریا اور بحیرہ روم کے دیگر شہروں میں حکام سونامی کے حوالے سے تیاری کرنے کی پالیسیز بنا رہے ہیں جس میں انخلا کی تکنیک بھی شامل ہے۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More