مسلم خواتین اسلامی ثقافت کے فروغ کے لیے اپنا کردار ادا کریں، ایرانی صدر کی اہلیہ جمیلہ علم الہدیٰ

اے پی پی  |  Apr 23, 2024

کراچی۔ 23 اپریل (اے پی پی):ایران کے صدر ڈاکٹر سید ابراہیم رئیسی کی اہلیہ ڈاکٹرجمیلہ علم الہدیٰ نے دنیا کی مسلم خواتین بالخصوص حجاب پہننے والی خواتین پر زور دیا کہ وہ اسلامی ثقافت کے فروغ کے لیے اپنا کردار ادا کریں۔یہ بات انہوں نے منگل کو یہاں آئی بی اے سٹی کیمپس میں منعقدہ “ابھرتی ہوئی مسلم تہذیب میں مسلم خواتین کا کردار” کے موضوع پر ایک سیمینار سے بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوٸے کہی۔

تقریب کی میزبانی فیکلٹی آف اسلامک اسٹڈیز جامعہ کراچی اور کلچر سینٹر آف ایران کراچی نے کی۔اس موقع پر ڈاکٹر جمیلہ علم الہدیٰ کی تحریر کردہ کتاب ’’ہنرِ زنانہ زیست‘‘ کی تقریب رونمائی بھی ہوئی جس کا اردو میں ترجمہ کوثر عباس نے کیا ہے۔قبل ازیں ڈاکٹر جمیلہ اور ان کی شریک حیات ایران کے صدر ڈاکٹر سید ابراہیم رئیسی کا کراچی آمد پر پرتپاک استقبال کیا گیا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کی طرح ایران میں بھی خواتین مختلف شعبوں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لے رہی ہیں جبکہ مرد بھی ان کا بھرپور ساتھ دیتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ یہ تمام خواتین کی ذمہ داری ہے کہ وہ معاشرے میں خواتین کی اہمیت اور کردار کو اجاگر کریں۔اپنے دورہ پاکستان کے بارے میں بات کرتے ہوئے ڈاکٹر جمیلہ نے کہا کہ انہیں یہ دیکھ کر بے حد خوشی ہوئی ہے کہ پاکستان میں خواتین بھی حجاب پہنتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ایرانی انقلاب کے بعد حجاب کو خواتین کے لیے لازمی لباس کا ضابطہ قرار دیا گیا اور ایران میں اس کا خیر مقدم کیا گیا۔ڈاکٹر جمیلہ نے کہا کہ ہم پاکستان سے ان لوگوں کو خوش آمدید کہیں گے جو مختلف شعبوں میں مشترکہ طور پر کام کرنا چاہتے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہم تعلیم اور تحقیق کے میدان میں مشترکہ طور پر آگے بڑھیں گے۔ڈین فیکلٹی آف اسلامک سٹڈیزپروفیسر ڈاکٹر زاہد علی زاہدی نے کہا کہ ڈاکٹر جمیلہ علم الہدیٰ کی لکھی گئی کتاب کا مواد شعبہ اسلامیات میں پڑھائے جانے والے “اسلام اور عورت” کے کورس کے لیے مددگار ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان میں خواتین ملک کے ہر شعبے میں بھرپور کردار ادا کر رہی ہیں۔بعد ازاں تقریب کے منتظمین کی جانب سے ایرانی صدر کی اہلیہ کو شیلڈ بھی پیش کی گئی۔اس موقع پر دیگر معززین کے علاوہ رکن قومی اسمبلی آصفہ بھٹو زرداری بھی موجود تھیں۔

وفاقی حکومت بلوچستان میں غربت میں کمی کے لیے اقدامات کر رہی ہے،چیئر پرسن بینظیر انکم سپورٹ پروگرام روبینہ خالد کوئٹہ۔ 28 مئی (اے پی پی):چیئر پرسن بینظیر انکم سپورٹ پروگرام روبینہ خالد نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت بلوچستان میں غربت میں کمی کے لیے اقدامات کر رہی ہے اور اس کیلئے بینظیر انکم سپورٹ پروگرام صوبے کی خواتین کو معاشی سپورٹ فراہم کرتاہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے صوبے میں بی آئی ایس پی اقدامات کی کوآرڈینیشن اور نفاذ کے لیے اسٹیک ہولڈرز کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں سیکرٹری آئی ٹی ایاز خان مندوخیل، سیکرٹری انڈسٹریز نور احمد پرکانی، سیکرٹری کالجز حافظ طاہر، ڈی جی بی آئی ایس پی عبدالجبار و دیگر متعلقہ حکام نے شرکت کی۔ انہوں نے کہا کہ وہ صدر پاکستان آصف علی زرداری کی ہدایت پر دورہ کررہی ہے جنہوں نے بلوچستان پر خاص توجہ دینے کی ہدایت کی ہے جس سے صدر آصف علی زرداری کی بلوچستان سے دلچسپی کا اظہار ہوتا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ بلوچستان کے عوام کو خصوصی توجہ دینے کے باعث ہی بلوچستان کے خواتین اور مردوں سے ہی پیشہ ورانہ تربیتی پروگرام کا آغاز کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ بہت جلد اس پروگرام پر عمل درآمد شروع ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ غربت میں کمی لانے کے لیے اسکلز پروگرام بہتر کرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ بلوچستان میں کشیدہ کاری، مختلف چیزوں کی پیکنگ، لائیو اسٹاک اور ہیلتھ کیئر بہتر کرنے کیلئے اقدامات کرنے ہوں گے اور اس کے علاوہ معیاری تربیت پر جانا ہوگا کیونکہ دنیا کو اب تربیت یافتہ ہنر مند افراد کی ضرورت ہے۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More