News Search
Home News Dictionary TV Channels Names Weather Live Cricket Videos Photos Results Naats
Home Taza Tareen
افغان فورسز کی چمن میں بلااشتعال فائرنگ، 1 شہری شہید، 18 افراد زخمی     چمن بارڈر پر افغان فورسز کی فائرنگ، 4 ایف سی جوان زخمی، آئی ایس پی آر     راجن پور: تھانہ محمد پور کی حدود میں فائرنگ،4افراد جاں بحق 1زخمی     وزیراعظم کا ویژن پاکستان کو لوڈ شیڈنگ فری بنانا ہے، عابد شیرعلی     آخری دن میزبان بولنگ کا ہمارے پاس جواب نہ تھا، مصباح الحق     بارباڈوس:ویسٹ انڈیزکےہاتھوں پاکستان کوعبرتناک شکست     سرحد پار سے مردم شماری ٹیم پر فائرنگ، چمن سرحد بند     ’مکی‘ اور ’منی‘ حقیقی زندگی میں میاں بیوی تھے     پاناما کیس، سپریم کورٹ کا آج ہی جے آئی ٹی تشکیل دینے کا فیصلہ     پنجاب: مختلف اضلاع میں سرچ آپریشن، 41 افراد گرفتار     
Urdu News
Maulana Tariq Jamil
a
Naat Khawan
Amjad Sabri Farhan Ali Qadri
Fasih Uddin Soharwardi Ghulam Mustafa Qadri
Imran sheikh Attari Junaid Jamshed
Owais Raza Qadri Shahbaz Qamar Faridi
Syed Mohammad Furqan Qadri Ummeh Habiba
Waheed Zafar Qasmi Zulfiqar Ali
UrduWire Names Directory
Muslim Names Arabic Names
Muslim Boy Names Muslim Girl Names
Pictures Gallery
Cleaning The Kaaba Area - One Of The Best Jobs In The World Cleaning The Kaaba Area - One Of The Best Jobs In The World
Kallar Kahar beautiful Motorway road view, Pakistan Kallar Kahar beautiful Motorway road view, Pakistan
Samzu Water Park Pictures Ticket Price 2015 & Location in Karachi Samzu Water Park Pictures Ticket Price 2015 & Location in Karachi
View all Pictures

 

Home >> Urdu News >> BBC Urdu
پاکستان کی خبریں Share your views
طیبہ کیس: ’انگوٹھا لگاؤ اور بچی لے جاؤ‘ [بی بی سی اردو] 11 Jan, 2017
طیبہ کیس

طیبہ پر مبینہ طور پر تشدد کرنے والی ملزہ بھی عدالت میں موجود تھیں

چیف جسٹسآف پاکستان میاں ثاقب نثار : کیا نام ہے آپ کا؟

طیبہ کا والد: جی محمد اعظم جی

۔ کہاں کے رہنے والے ہو؟

۔ جی، تحصیل جڑانوالہ، ضلع فیصل آباد

کمسن گھریلو ملازمہ طیبہ اسلام آباد سے بازیاب

طیبہ کی ماں ہونے کی دو دعویدار عدالت پہنچ گئیں

۔ کتنے بچے ہیں تمارے؟

۔ جی تین بچے ہیں جن میں دو بیٹیاں اور ایک بیٹا شامل ہے اور طیبہ سب سے بڑی بچی ہے جس کی عمر دس سال ہے۔

۔ اپنی بڑی بیٹی یعنی طیبہ کو ملازمت پر کب بھجوایا؟

۔ جی اگست سنہ 2016میں۔

۔ بیٹی کو کہاں بھجوایا تھا ملازمت کے لیے؟

۔ جی محلے کی ایک عورت نے جس کا نام نادرہ ہے بتایا تھا کہ فیصل آباد میں ایک گھر میں ایک چھوٹے بچے کو کھلانا ہے اوراُنھیں ایک بچی کی ضرورت ہے، اس لیے میں نے اپنی بچی فیصل آباد بھجوا دی۔

۔ کتنی تنخواہ ملتی تھی؟

۔ جی تین ہزار روپے ماہانہ اور 18 ہزار روپے ایڈوانس میں لیے تھے۔

۔ اس عرصے کے دوران کیا آپ کی طیبہ سے ملاقات ہوئی؟

۔ جی ملاقات تو نہیں ہوئی محض دو مرتبہ طیبہ سے ٹیلی فون پر بات ہوئی تھی۔

۔ طیبہ پر تشدد کا علم کب ہو؟

۔ جی ٹی وی پر دیکھا تھا اور اس کے بعد میں نے نادرہ سے رابطہ کیا تھا جس کے بعد معلوم ہوا کہ طیبہ فیصل آباد میں نہیں بلکہ اسلام آباد میں ہے۔

جی میں تو پہلی مرتبہ اسلام آباد آیا ہوں اور مجھے بتایا گیا تھا کہ یہ برما ٹاؤن ہے، اس کے علاوہ گاڑی ہمیں اس مقدمے میں اُن کے وکیل راجہ ظہور نے فراہم کی تھی

محمد اعظم

۔ تو پھر کیا کیا؟

۔ جی گاڑی لیکر ہم فیصل آباد سے اسلام آباد آ گئے جہاں پر ہمیں اسلام آباد کے نواحی علاقے برما ٹاون میں ایک گھر میں ٹھرایا گیا۔

۔ آپ کو کیسے پتہ چلا کہ یہ برما ٹاؤن ہے اور اسلام آباد آنے کے لیے گاڑی کس نے فراہم کی تھی؟

۔ جی میں تو پہلی مرتبہ اسلام آباد آیا ہوں اور مجھے بتایا گیا تھا کہ یہ برما ٹاؤن ہے، اس کے علاوہ گاڑی ہمیں اس مقدمے میں اُن کے وکیل راجہ ظہور نے فراہم کی تھی۔

۔ کیا واقعی اس وکیل نے گاڑی فراہم کی تھی؟

۔ جی گاڑی علاقے کے با اثر شخصرائے عثمان خان نے دی تھی۔

۔ گھر کس نے دلوایا تھا؟

۔ جی گھر وکیل نے دلوایا تھا۔

۔ اس کے بعد کیا ہوا؟

طیبہ کیس

بچی کی والدہ کا دعویٰ ایک سے زائد خواتین نے کیا تھا

۔ جی وکیل صاحب ایک کاغد (صلح نامہ) لیکر آئے اور کہا کہ اس پر انگوٹھا لگا دو بچی مل جائے گی۔

۔ اس کاغد پر کیا لکھا تھا اور پھر تم نے کیا کیا؟

۔ جی میں ان پڑھ ہوں مجھے نہیں پتا کہ اس پر کیا لکھا ہوا تھا، بس میں نے اپنی بیٹی حاصل کرنے کے لیے اس کاغذ پر انگوٹھا لگا دیا۔

۔ پھر کیا ہوا؟

۔ جی اس کے بعد ہم اسلام آباد کی عدالت میں گئے، جہاں پر وکیل صاحب نے کاغذ جج کو دیے اور کچھ دیر کے بعد طیبہ کو اُن کے حوالے کردیا گیا۔

۔ اس کے بعد آپ اپنے گاؤں چلے گئے تھے؟

۔ جی نہیں ہمیں برما ٹاؤن میں ایک بڑے گھر میں رکھا گیا، جہاں پر کچھ دیر کے بعد ایک یونیفارم پہنے ہوئے ایک شخص آیا جس نے میرے موبائیل سے سم نکال لی اور سم کو اپنے ساتھ لیکر چلا گیا۔

یہاحوال کسی عام مقدمے کا نہیں بلکہ ایڈیشنل سیشن جج کی اہلیہ کے تشدد کا شکار ہونے والی دس سالہ کمسن طیبہ کے مقدمے کا ہے اور یہ سوال و جواب پاکستان کے چیف جسٹس میاں ثاقب نثار اور کمسن طیبہ کے والد کے درمیان ہوئے تھے۔ چیف جسٹس نے ہی اس واقعہ کا از خودنوٹس لیا تھا۔

سماعت کے دوران کمرہ عدالت میں انسانی حقوق کی تنظمیوں کے نمائندوں ایک خاصی تعداد موجود تھی۔ اسکے علاوہاسلام آباد میں مختلف ملکوں کے سفارت کار بھی موجود تھے۔

طیبہ کی کونسلنگ کرنے اور اسے شیلٹر فراہم کرنے کے لیے انسانی حقوق کی تنظیموں کے علاوہ انسانی حقوق کی وزارت کے اہلکار بھی بڑھ چڑھ کر اپنی خدمات پیش کر رہے تھے تاہم عدالت نے کمسن لڑکی کو سویٹ ہوم بھجوا دیا۔

اس کے بعد جب سپریم کورٹ نے طیبہ کی والدہ نصرت بی بی، جو آٹھ ماہ کی حاملہ ہے کی دیکھ بھال کے لیے انسانی حقوق کی تنظیموں کے نمائندوں سے کہا تو کمرہ عدالت میں موجود ان تنظیموں کے ایک بھی نمائندے نے اپنی نشست سے اُٹھنے کی زحمت گنوارہ نہیں کی۔

اس صورت حال میں چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے حکم دیا کہاگر کوئی طیبہ کی والدہ کی دیکھ بھال کی ذمہ داری لینا چاہتا ہے تو وہ سپریم کورٹ میں انسانی حقوقسے متعلق قائم کیے گئے سیل میں درخواست دے۔

اس از خود نوٹس کی سماعت کے دوران طیبہ کو صاف ستھرا لباس پہنایا گیا تھا اور اس کی دیکھ بھال کی ذمہ داری اے ایس پی ارسلہ کو دی گئی تھی۔

سماعت کے دوران ایڈیشنل سیشن جج کی اہلیہ ملزمہ ماہین بھی کمرہ عدالت میں موجود تھیں، تاہم ان کے دو بھائیوں نے ان کے اردگرد حصار بنایا ہوا تھا۔ سماعت کے بعد جب ملزمہ سپریم کورٹ سے باہر نکلیں تو وہاں پر موجود میڈیا کے نمائندوں نے ملزمہ کی تصاویر بنانے کی کوشش کی تو ملزمہ کے بھائیوں نے ان پر حملہ کر دیا۔

پولیس اہلکار موقع پر پہنچ گئے اور اُنھوں نے ملزمہ کے بھائیوں کو متعقلہ تھانہ سیکرٹریٹ منتقل کردیا۔


View News As Image
Post Your Comments
Select Language:    
Type your Comments / Review in the space below.

Name: Email:(Will not be shown) City:
Enter The Code:

 
Home | About Us | Contact Us |  Profiles |  Privacy Policy & Disclaimer | What is Meta News?
Top Searches: Jang News Cricinfo Express Tribune,  , SSC Part 1 Results 2016   Dunya News Bol News Live Samaa News Live Metro 1 News Waqt News Hum TV PTV Sports Live KTN News
Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on "as it is" based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Please read more!

UrduWire.com - First ever Urdu Meta News portal