حارث رؤف نے منفرد انداز میں جشن منانے کی وجہ بتادی

بول نیوز  |  Jan 19, 2022

پاکستان ٹیم کے بولر حارث رؤف نے وکٹ لینے کے بعد منفرد انداز میں جشن منانے کی وجہ بتادی ہے۔

پاکستان ٹیم کے مایہ ناز فاسٹ بولر حارث رؤف اپنے منفرد انداز میں جشن منانے کی وجہ سے مشہور ہیں جبکہ حال ہی میں ان کی بی بی ایل میچ کے دوران منفرد انداز میں جشن منانے کی ویڈیو بھی وائرل ہوئی تھی۔

وائرل ہونے والی ویڈیو میں دیکھا گیا تھا کہ حارث رؤف نے وکٹ لینے کے بعد منفرد انداز اپنایا اور ہاتھ کے اشارے سے سینیٹائزر لگایا جس کے بعد انہوں نے اپنی جیب سے ماسک نکلا کر پہن لیا۔

یہ بھی پڑھیں: بگ بیش لیگ: حارث رؤف نے وکٹ لینے کے بعد ماسک پہن لیا

اس حوالے سے جب ان سے سوال کیا گیا تو ان کا کہنا تھا کہ بگ بیش کے دوران میلبرن اسٹارز کی ٹیم کووڈ کیسز کی وجہ سے کافی متاثر تھی، کوشش کی کہ ان کی توقعات پر پورا اتروں۔

واضح رہے کہ حارث رؤف بگ بیش لیگ میں میلبرن اسٹارز کی جانب سے کھیل رہے تھے جس کی نمائندگی کرتے ہوئے انہوں نے یہ منفرد انداز پرتھ اسکارچر کے کھلاڑی پیٹرسن کو آؤٹ کرنے کے بعد اپنایا تھا۔

یہ بھی پڑھیں: حارث رؤف ننھے مداحوں کے دلوں میں بھی راج کرنے لگے

حارث رؤف کا کہنا ہے کہ آسٹریلیا میں کیسز مثبت آنے پر لوگوں کو آگاہی دینے کے لیے جشن کا اسٹائل بنایا اور آسٹریلوی باشندوں کو آگاہی دینے کی کوشش کی۔

ان کا کہنا تھا کہ میرا یہ انداز اپنانے کا مقصد یہ پیغام دینا تھا کہ موجودہ حالات میں ہاتھوں کو سینیٹائز کریں اور چہرے پر ماسک لازمی لگائیں۔

انہوں نےمزید کہا کہ لاہورقلندرز کو اس مرتبہ ٹرافی جتوانے کی کوشش کریں گے جبکہ شاہین آفریدی اور راشد خان کی موجودگی میں بولنگ اسکواڈ اچھا ہے۔ ایک دوسرے کو بیک کریں گے اور لیگز کے تجربے سے فائدہ اٹھائِیں گے۔

یہ بھی پڑھیں: مہندرا سنگھ دھونی کا حارث رؤف کو تحفہ

لاہور قلندرز کے کپتان شاہین شاہ آفریدی کے کپتان بننے پر ان کا کہنا تھا کہ دوست شاہین آفریدی کے کپتان بننے کی خوشی ہوئی ہے، ان کے ساتھ مل کر سو فیصد دینے کی کوشش کریں گے۔

حارث رؤف نے کہا کہ شاہین آفریدی اچھا بولر ہے اور اب اچھا کپتان بھی ثابت ہو گا، مجھے اس پر اعتماد ہے کیونکہ شاہین آفریدی بہت متحرک کپتان ہے، وقت سے پہلے کیمپ لگایا تاکہ کھلاڑی اچھا پرفارم کریں۔

یہ بھی پڑھیں: حارث رؤف نے اپنی پسندیدہ اداکارہ کا نام بتادیا؟ ویڈیو وائرل

Square Adsence 300X250
مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More