مریم نواز کا نام ای سی ایل سے نکالنے کی درخواست پر حکومت سے جواب طلب

اب تک  |  Jan 15, 2020

لاہور:(15 جنوری 2020)لاہور ہائی کورٹ نے مریم نواز کا پاسپورٹ واپس کرنے اور نام ای سی ایل سے نکالنے پر ہونے والی تاخیر کی وجوہات طلب کرلیں ہیں۔

تفصیلات کے مطابق جسٹس طارق عباسی کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے مریم نواز کی درخواست پر سماعت کی،درخواست میں موقف اختیار کیا گیا کہ عدالت نے وفاقی حکومت کو نام ای سی ایل سے نکالنے کی درخواست پر فیصلے کا حکم دیا تھا،عدالتی حکم کے بعد حکومت شہریوں کے حقوق کیساتھ کھیل نہیں سکتی۔

اس دوران جسٹس طارق عباسی نے استفسار کیا کہ آپ نام ای سی ایل سے نکلوانا چاہتے ہیں یا شرائط کو ختم کروانا چاہتے ہیں،اعظم نذیر تارڑ ایڈووکیٹ نے موقف اختیار کیا کہ پہلے عدالت نے نام ای سی ایل سے نکلوانے کیلئے درخواست وفاقی حکومت کو بھجوائی اورسات روز میں فیصلے کا حکم دیا تاہم چار ہفتے گزرگئے وفاقی حکومت نے درخواست پر کوئی فیصلہ نہیں کیا۔

اس موقع پر کمرہ عدالت میں موجود ایڈیشنل اٹارنی جنرل اشتیاق احمد خان نےعدالت کو بتایا کہ کابینہ نے فیصلہ کردیا ہے اور مریم نوازکا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ سے نہیں نکالا گیا کیونکہ وفاقی حکومت کے فیصلے کے بعد مریم نواز کی درخواست زائد المعیاد ہو چکی ہے۔

عدالت نے فریقین کے دلائل کے بعد وفاقی حکومت سے ای سی ایل سے نام نکالنے کی درخواست پر فیصلہ کرنے میں تاخیر کی وجوہات طلب کرتے ہوئے نیب اور دیگر فریقین سے اکیس جنوری کو جواب طلب کر لیا ہے۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More