پاکستان کپ کے ساتویں راؤنڈ میں سدرن پنجاب، سندھ اور سنٹرل پنجاب نے اپنے اپنے میچز جیت لیے

روزنامہ اوصاف  |  Jan 20, 2021

اسلام آباد ( مانیٹرنگ ڈیسک) این بی پی اسپورٹس کمپلیکس کراچی میں کھیلے گئے میچ میں سدرن پنجاب نے عمر خان کی عمدہ باؤلنگ کی بدولت بلوچستان کو 8 وکٹوں کے بھاری مارجن سے شکست دے دی۔ سدرن پنجاب نے 158 رنز کا ہدف 34.4 اوورز میں 2 وکٹوں کے نقصان پر حاصل کرلیا۔ کپتان شان مسعود نے 7 چوکوں کی مدد سے 66 رنز کی ناقابل شکست اننگز کھیلی۔ انہوں نے مختار احمد کے ہمراہ 121 رنز کی شراکت قائم کی تھی۔ مختار احمد نے 6 چوکوں اور 2 چھکوں کی مدد سے 63 رنز بنائے۔ صہیب مقصود نے 14 رنز بنائے جبکہ حسین طلعت 9 رنز بناکر ناٹ آؤٹ رہے۔ بلوچستان کے حارث سہیل اور رضا الحسن نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔اس سے قبل سدرن پنجاب نے ٹاس جیت کر بلوچستان کو پہلے بیٹنگ کی دعوت دی تو عمر خان نے شاندار باؤلنگ کرتے ہوئے 42 رنز کے عوض پانچ وکٹیں حاصل کیں۔ بلوچستان کی پوری ٹیم 38.2 اوورز میں 157 رنز پر ڈھیر ہوگئی۔بسم اللہ خان 38 اور ایاز تصور 36 رنز بناکر آؤٹ ہوئے۔اسپنر عمر خان کو مین آف دی میچ قرار دیا گیا۔اسٹیٹ بنک اسٹیڈیم کراچی میں کھیلے گئے میچ میں سندھ نے دانش عزیز اور حسان کی شاندار کارکردگی کی بدولت خیبرپختونخوا کو 4 وکٹوں سے ہرادیا۔ سندھ نے 276 رنز کا مطلوبہ ہدف 10 گیندیں قبل حاصل کرلیا۔ دانش عزیز نے 102 گیندوں پر 6 چھکوں اور 5 چوکوں کی مدد سے 101 رنز کی ناقابل شکست اننگز کھیلی۔ حسان خان 51 رنز بناکر آؤٹ ہوئے، دونوں بلے بازوں نے چھٹی وکٹ کے لیے 148 رنز کی شراکت قائم کی، جس نے فتح میں اہم کردار ادا کیا۔ اس سے قبل سعد علی ایک رنز کی کمی سے اپنی نصف سنچری مکمل نہ کرسکے، وہ 49 رنز بناکر آؤٹ ہوئے۔خیبرپختونخوا کے آصف آفریدی نے 3 جبکہ ارشد اقبال نے 2 وکٹیں حاصل کیں۔ سندھ کی دعوت پر پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے کے پی نے 49.2 اوورز میں 275 رنز بنائے۔ دسویں نمبر پر بیٹنگ کے لیے میدان میں اترنے والے محمد وسیم جونیئر 54 رنز بناکر سب سے نمایاں رہے۔ ان کی اننگز میں 4 چھکے اور 5 چوکے شامل تھے۔ افتخار احمد نے 39 اور فخر زمان نے 33 رنز بنائے۔سند ھ کے کپتان انور علی نے 2 وکٹیں حاصل کیں۔ حسان خان نے میچ میں 2 رن آؤٹ اور کیچ پکڑنے کے ساتھ ساتھ ایک وکٹ بھی حاصل کی۔ میچ میں شاندار سنچری اسکور کرنے پر دانش عزیز کو مین آف دی میچ قرار دیا گیا۔
مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More