سپریم کورٹ نے انتظامیہ کو وکلا کے چیمبرز گرانے سے روک دیا

ہم نیوز  |  Feb 26, 2021

سپریم کورٹ نے اسلام آباد انتظامیہ کو منگل تک کچہری میں وکلا کے چیمبرز گرانے سے روک دیا ہے۔ عدالت نے اٹارنی جنرل اور ایڈووکیٹ جنرل اسلام آباد کو نوٹس بھی جاری کر دیے۔ 

چیف جسٹس  گلزار احمد نے دورانِ سماعت روسٹرم کے قریب وکلا کے اکھٹے ہونے پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ عدالت پر دباوَ نہ ڈالیں، وکیلوں کو اچھی طرح جانتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: 

وکلا کو روسٹرم سے پیچھے ہٹنے کا حکم دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کوئی عقل اور شعور ہونا چاہیے، جہاں کچھ وکیل اکھٹے ہوتے ہیں  کچھ الٹا بولتے اور کرتے ہیں۔ ہم بھی وکیل رہ چکے ہیں لیکن یہ کام کبھی نہیں کریں گے۔ 

جسٹس گلزار احمد نے استفسار کیا کہ بارایسوسی ایشن کو چیمبرز لیز پر دینے اور پبلک کی زمین پر چیمبرز بنانے کا اختیار کہاں سے آگیا؟ ملک میں کہیں بھی گراونڈ میں چیمبرز نہیں بنے۔  

دوسری جانب انسداد دہشتگردی کی عدالت (اے ٹی سی) نے اسلام آباد ہائی کورٹ حملہ کیس میں گرفتار 2 وکلا کے جوڈیشل ریمانڈ میں 4 مارچ تک توسیع کر دی ہے۔

ڈیوٹی جج شاہ رخ ارجمند نے مقدمہ کی سماعت کی اور وکلا راجہ زاہد اوراسداللہ کو اڈیالہ جیل بھجوا دیا گیا۔ 

خیال رہے کہ چند روز قبل سی ڈی اے اور ضلعی انتظامیہ نے اسلام آباد کی ایف ایٹ کچہری میں آپریشن کے دوران وکلا کے 150 سے زائد چیمبرز گرائے تھے۔ 

سی ڈی اے اور ضلعی انتظامیہ کی ٹیم اگلی صبح پھر آپریشن کے لیے پہنچی  تو وکلا نے شدید مزاحمت کی اور سی ڈی اے کے شعبہ انفورسمنٹ اور پولیس اہلکاروں پر پتھراؤ بھی کیا۔

مزید پرھیں: 

وکلا احتجاج کرتے ہوئے اسلام آباد ہائی کورٹ جا پہنچے، نعرے لگائے اور توڑ پھوڑ کی جس کی وجہ سے  چیف جسٹس اطہر من اللہ اور دیگر ججز اپنے چیمبرز میں محصورہوگئے تھے۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More