کتوں کی بہتات، ویکسین کی عدم دستیابی: انتظامیہ سےجواب طلب

سماء نیوز  |  Apr 13, 2021

فوٹو: سماء ڈیجیٹل

آوارہ کتوں کی بہتات اور ویکسین کی عدم دستیابی پر سندھ ہائیکورٹ نے ایڈمینسٹر کے ایم سی اور کراچی کے اضلاع انتظامیہ سمیت تمام کنٹونمنٹ بورڈ انتظامیہ کو طلب کر لیا۔

منگل 13 اپریل کو سماعت کے دوران سندھ میں بڑھتے ہوئے کتے کاٹنے کے کیسز پر عدالت نے تشویش کا اظہار کیا۔

عدالت نے ریمارکس دیے کہ اتنے کیسز بڑھ گئے ہیں صورتحال غیر تسلی بخش ہے، کسی بچے کو کتے نے کاٹا اور پوری زندگی اپاہج ہوگیا۔ کسی کی کتے نے آنکھ نکال دی پتہ نہیں کیا ہو رہا۔ بتائیں کیا کرنا چاہیے یا پھر آرڈر کریں اور ہم بھی سب کو بلائیں۔

عدالت نے مزید ریمارکس دیے کہ روز کتوں کے کاٹنے کے کیس رپورٹ ہو رہے ہیں، اگر معاملہ بڑھا گیا تو خوف و ہراس پیدا ہوگا۔

سیکرٹری بلدیات کی جانب سے پیش رفت رپورٹ عدالت میں پیش کی گئی جس کے مطابق ٹینڈر جاری کر دیا گیا ہے جس پر پیش رفت ہو رہی ہے۔

درخواست گزار نے عدالت کو بتایا کہ 2019 میں 92 ہزار واقعات رونما ہوئے اور 2020 میں 2 لاکھ 60 ہزار 715 واقعات رونما ہوئے جبکہ اس سال 5 ہزار کیسز رپورٹ ہوچکے۔

ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل سندھ نے عدالت کو بتایا کہ پتہ نہیں یہ کہاں سے اعداد وشمار بنا رہے ہیں۔

عدالت نے ریمارکس دیے کہ کسی کی آنکھ ضائع ہوگئی، کوئی مر گیا۔ آپ لوگ ہاتھ پر ہاتھ دھرے بیٹھے ہیں۔ جسے کتا کاٹ لے، پانی تک نہیں پی سکتا۔ ساری دنیا کو پتہ ہے، آپ کو پتہ نہیں۔ بزرگوں نے پارکوں میں چہل قدمی کرنا بند کردی، پارکوں میں 20، 20 کتے گھوم رہے ہیں، میڈیا رپورٹ آرہی ہیں سب کو معلوم ہے۔ روزانہ 5 سے 20 واقعات رونما ہو رہے ہیں کیا کر رہے ہیں آپ۔

عدالت نے نے ایڈمینسٹر کے ایم سی اور کراچی کے اضلاع انتظامیہ سمیت تمام کنٹونمنٹ بورڈ انتظامیہ کو طلب کرتے ہوئے سماعت 6 مئی تک ملتوی کر دی۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More