مسجد الحرام: رمضان میں یومیہ 50 ہزار افراد کو عمرہ اور ایک لاکھ افراد کو عبادات کی اجازت

وائس آف امریکہ اردو  |  Apr 14, 2021

ویب ڈیسک — سعودی عرب میں مسلمانوں کے مقدس ترین مقام مسجد الحرام میں رمضان کے آغاز پر ایسے افراد نے عمرہ ادا کیا اور عبادات کیں جن کو کرونا ویکسین لگائی جا چکی ہے یا وہ وبا سے صحت یاب ہونے کے بعد وائرس کے مقابلے میں مدافعت رکھتے ہیں۔

خبر رساں ادارے 'اے ایف پی' کے مطابق ماہ صوم کے پہلے روزے مسجد الحرام میں تراویح بھی ادا کی گئی۔ اس موقع پر نمازِ تراویح میں شریک افراد نے سماجی دوری برقرار رکھی۔

سعودی عرب کی وزارتِ حج و عمرہ نے پہلے ہی اعلان کر دیا تھا کہ مسجد الحرام میں ان افراد کو ہی داخل ہونے اور عبادات کی اجازت ہو گی جنہوں نے ویکسین لگوا لی ہو یا وہ وبا سے صحت یاب ہو چکے ہیں۔ یعنی ان میں وبا کا مقابلہ کرنے کی قوتِ مدافعت پیدا ہو چکی ہو۔

اسی طرح وہ افراد جو کہ بغیر اجازت نامے کے مسجد الحرام میں داخل ہوں گے ان پر ایک ہزار ریال (ڈھائی سو ڈالرز) کا جرمانہ ہوگا۔

'گلف نیوز' کی ایک رپورٹ کے مطابق مسجد الحرام اور مسجد نبوی کے انتظامات دیکھنے والے حکام کا کہنا ہے کہ کرونا وائرس کے باعث بندش کے بعد چار اکتوبر 2020 کے بعد سے مارچ کے اختتام تک 32 لاکھ افراد نے عمرہ ادا کیا ہے۔

خیال رہے کہ سعودی حکام کی جانب سے 70 برس سے زائد عمر کے افراد کو عمرہ ادائیگی کے اجازت نامے جاری نہیں کیے جا رہے۔ صرف ان افراد کو عمرہ ادا کرنے کی اجازت دی جا رہی ہے جن کی عمر 18 سے 69 برس کے درمیان ہے۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More