وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی کی ایرانی صدر اور حکام سے ملاقاتیں

سماء نیوز  |  Apr 22, 2021

 وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی سے ملاقات میں ایرانی صدر حسن روحانی نے پاکستان کے ساتھ تجارت، سرمایہ کاری اور سرحدی انتظام کے شعبوں میں تعاون بڑھانے کے عزم کا اعادہ کیا ہے۔

شاہ محمود قریشی نے بدھ کو ایران کے صدر حسن روحانی، پارلیمنٹ کے اسپیکر اور دیگر حکام سے ملاقاتیں کیں۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ دونوں ممالک کے درمیان مضبوط اور خوشگوار تعلقات قائم ہیں، جن کی بنیاد مشترکہ تاریخ، ثقافت، مذہب اور زبان پر مبنی ہے۔ وزیر خارجہ نے کشمیری عوام کے اصولی مؤقف کی مسلسل حمایت کرنے پر ایرانی قیادت کا شکریہ ادا کیا۔

اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے ایرانی صدر حسن روحانی نے پاکستان کے ساتھ تجارت، سرمایہ کاری اور سرحدی انتظام سمیت دیگر شعبوں میں تعاون بڑھانے کے عزم کا اعادہ کیا۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اور پاک ایران پارلیمانی دوستی گروپ کے چیئرمین احمد امیرآبادی فراحانی نے دونوں ملکوں کے پارلیمانی دوستی گروپس کو فعال کرنے کی ضرورت پر زور دیا ہے۔

وزیر خارجہ نے تہران کے قومی پارلیمنٹ ہاؤس میں چیئرمین پاک ایران پارلیمانی دوستی گروپ سے ملاقات کے دوران کہا کہ پاکستان ایران کے ساتھ مشترکہ مذہبی اور ثقافتی اقدار پر مبنی تعلقات کو بہت اہمیت دیتا ہے، فریقین نے دونوں ملکوں کے پارلیمانی وفود کے تبادلے پر اتفاق کیا۔

دوسری جانب ایرانی پارلیمنٹ کے اسپیکر محمد باغر غالباف سے گفتگو کرتے ہوئے شاہ محمود قریشی نے ایشیائی پارلیمانی اسمبلی سمیت بین الاقوامی پارلیمانی فورمز پر دونوں ممالک کے درمیان اشتراک بڑھانے پر بھی زور دیا۔

ملاقات کے دوران مغرب میں اسلامو فوبیا کے بڑھتے ہوئے رجحان سمیت دیگر اہم علاقائی اور بین الاقوامی معاملات زیر بحث آئے۔ وزیر خارجہ نے اسپیکر کی توجہ غیرقانونی طور پر بھارت کے زیر تسلط جموں و کشمیر میں بڑے پیمانے پر جاری انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کی طرف مبذول کرائی۔

شاہ محمودقریشی نے تہران میں سربراہ عالمی ادارہ صحت سے بھی ملاقات کی، جس میں کرونا کی عالمی وباء سمیت باہمی دلچسپی کے دیگر امور پر بات چیت ہوئی۔ وزیر خارجہ نے کہا کہ کرونا کی تیسری لہر پہلے سے زیادہ مہلک ثابت ہورہی ہے، پاکستان میں کرونا ویکسی نیشن کا عمل جاری ہے۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More